உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Modi@8:پچھلے8سال میں پی ایم مودی کی خارجہ پالیسی پہنچی نئی بلندیوں پر

    پی ایم مودی کے دور حکومت کے آٹھ سالوں میں خارجہ پالیسی ہوئی مضبوط۔

    پی ایم مودی کے دور حکومت کے آٹھ سالوں میں خارجہ پالیسی ہوئی مضبوط۔

    Modi@8: قمر آغا کا خیال ہے کہ آج ہندوستان کے بنگلہ دیش، میانمار اور نیپال کے ساتھ بہتر تعلقات ہیں۔ اس کے ساتھ ہی قمر آغا کا کہنا ہے کہ پی ایم نریندر مودی نے لو ایسٹ پالیسی سے آگے بڑھ کر ایکٹ ایسٹ پالیسی کو فروغ دیا۔

    • Share this:
      Modi@8:مودی حکومت کی خارجہ پالیسی کا تجزیہ کرتے ہوئے، ایک پروگرام میں وزیر خارجہ ایس جے شنکر نے کہا کہ – آج بیرون ملک جانے والا ہر ہندوستانی جانتا ہے کہ ہمارے پاس وزیر اعظم نریندر مودی (Prime Minister Narendra Modi) ہیں، وہ اپنی حکومت کے ساتھ ہیں۔ وہ یہ بھی جانتے ہیں کہ کسی بھی بحران کی صورت میں یہ ساتھ ضرور ہوگا۔ اس سے ملک کے پروفائل میں بہت بڑی تبدیلی آئی ہے، دنیا میں ہمارے اور ہمارے بارے میں شہریوں کا نظریہ مثبت انداز میں بدل گیا ہے۔

      وزیر خارجہ نے بحران کے دوران مودی حکومت کے 'عوام پر مبنی' نقطہ نظر پر تبادلہ خیال کرتے ہوئے کہا کہ ماضی میں وندے بھارت مشن (کووڈ کے دوران پھنسے ہوئے ہندوستانیوں کو واپس لانے کا آپریشن)، آپریشن گنگا (یوکرین سے ہندوستانیوں کا انخلاء)، اور آپریشن دیوی شکتی (افغانستان سے انخلاء) کی طرف بھی توجہ مبذول کروائی۔

      ہندوستانی خارجہ پالیسی میں آئی ہی مثبت تبدیلی
      امور خارجہ کے ماہر قمر آغا کا کہنا ہے کہ مودی سرکار کے آنے کے بعد تسلسل کے ساتھ ساتھ ہندوستانی خارجہ پالیسی میں بھی برتری نظر آ رہی ہے۔ ان کا ماننا ہے کہ پی ایم نریندر مودی نے ہندوستان کی خارجہ پالیسی میں بھی سب کا ساتھ اور ترقی کی پالیسی کو اپنایا ہے۔ اس کے تحت وزیر اعظم نریندر مودی نے ’’پڑوسی پہلے‘‘ کی پالیسی کو اپنایا اور اپنے پڑوسی ممالک کے ساتھ تعلقات کو مضبوط کرنے کا کام کیا۔

      یہ بھی پڑھیں:
      جانیے آٹھ سال میں کانگریس و دوسری پارٹیوں کے کون سے قدآورلیڈر BJP میں ہوئے شامل

      پی ایم نریندر مودی نے پڑوسی ممالک کے ساتھ بنائے بہتر تعلقات
      قمر آغا کا کہنا ہے کہ 2014 میں جب وزیر اعظم نریندر مودی نے حلف اٹھایا تو اس وقت سارک ممالک کے سربراہان کو حلف کی تقریب میں مدعو کیا گیا تھا۔ اس کے ساتھ ہی پی ایم نریندر مودی نے پڑوسی ممالک کے ساتھ بہتر تعلقات استوار کیے اور ضرورت پڑنے پر کھل کر مدد بھی کی۔ کورونا میں ہندوستان نے ویکسین کے ذریعے ہمسایہ ممالک کی مدد کی ہے،

      یہ بھی پڑھیں:
      PM Kisanمیں اس ڈاکیومنٹ کے بغیر نہیں ہوگا رجسٹریشن، کرنا ہوگا پورٹل پر اپ لوڈ

      اسی طرح ہندوستان سری لنکا کے ضرورت مندوں کی مختلف طریقوں سے مدد کر رہا ہے۔ قمر آغا کا خیال ہے کہ آج ہندوستان کے بنگلہ دیش، میانمار اور نیپال کے ساتھ بہتر تعلقات ہیں۔ اس کے ساتھ ہی قمر آغا کا کہنا ہے کہ پی ایم نریندر مودی نے لو ایسٹ پالیسی سے آگے بڑھ کر ایکٹ ایسٹ پالیسی کو فروغ دیا۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: