ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

تمام بالغ شہریوں کے لیے مفت ویکسی نیشن،مرکزی حکومت کی نئی پالیسی میں کیاہے شامل؟

شہریوں کے لئے ہندوستانی حکومت ریاستوں کو مفت ویکسین الاٹ کرے گی۔ مودی نے کہا مینوفیکچررز کی طرف سے تیار کی جانے والی کل ویکسینوں میں سے پچاسی فیصد مرکز خریدے گا اور ریاستوں کو بھیجا جائے گا۔

  • Share this:

وزیر اعظم نریندر مودی (Narendra Modi) نے پیر کو ایک اہم اعلان میں کہا ہے کہ مرکزی حکومت 21 جون 2021 سے تمام ریاستوں کے تمام بالغ شہریوں کو کورونا وائرس (COVID-19) کے خلاف مفت ویکسین فراہم کرے گی۔اب ملک کے تمام شہریوں کے لئے حکومت ہند ہی مفت ویکسین فراہم کرے گی ۔ ملک میں تیارشدہ ویکسین میں سے 25 فیصد ،پرائیوٹ سیکٹر کے اسپتال براہ راست لے پائیں


  • اس کا کیا مطلب؟


یہ مرکز کی طرف سے ایک اہم پہل ہے۔ اس سے قبل مرکز ملک میں ٹیکے لگانے کا تقریبا 25 فیصد کام انجام دے رہا تھا  اور 45 سے زائد سال کے لوگوں کے لیے اور صحت کی دیکھ بھال اور فرنٹ لائن کارکنوں کے لیے اپنی جاری کوششوں کو جاری رکھیں گے۔ دوسرے لفظوں میں مرکزی حکومت آنے والی پالیسی کے تحت ہندوستان کی 75 فیصد ویکسینیشن مہم کے لئے ذمہ دار ہوگی۔ اس کا مطلب تمام بالغ افراد کے لئے مفت ویکسین ہے، جو نجی اسپتالوں میں جانے کے لئے انتخاب کرنے والوں کو روکتا ہے۔ یہ صرف دعوی ہے یا حقیقت، یہ تو آنے والا وقت ہی بتائے گا۔


شہریوں کے لئے ہندوستانی حکومت ریاستوں کو مفت ویکسین الاٹ کرے گی۔ مودی نے کہا مینوفیکچررز کی طرف سے تیار کی جانے والی کل ویکسینوں میں سے پچاسی فیصد مرکز خریدے گا اور ریاستوں کو بھیجا جائے گا۔



  • کیا تبدیلیاں؟


موجودہ پالیسی جو یکم مئی 2021 کو عمل میں آئی تھی۔ اس کے تحت ویکسینیشن کی 50 فیصد کوریج کے لئے مرکز ذمہ دار تھا۔ اس کا مقصد صرف 45 سے زیادہ گروپ اور صحت کی دیکھ بھال اور فرنٹ لائن ورکرز تھے۔ ان گروپوں کو مرکزی تعاون سے چلانے والی ڈرائیو کے تحت کچھ ادا کرنے کی ضرورت نہیں تھی۔ اسی وقت یکم مئی 2021 سے ویکسین بنانے والے اپنی پیداوار میں سے 50 فیصد ریاستوں (25٪) اور نجی اداروں (25٪) کو فروخت کرسکتے ہیں۔

ریاستوں اور نجی اسپتالوں کے ذریعہ شروع کی جانے والی مہموں کے تحت فی الحال 18 سے 44 برس کی آبادی کے لیے ویکسینیشن کا احاطہ کیا جارہا ہے




بھارت بائیوٹیک کے کوواکسن کے لئے ، ریاستوں کو خوراک کی قیمت 400 روپیہ ادا کرنا پڑتی ہے جبکہ نجی اسپتال ایک خوراک میں 1200 روپے ادا کرتے ہیں۔ سیرم انسٹی ٹیوٹ آف انڈیا کے کوشیلڈ کے لئے اسی طرح کے اعدادوشمار 300 اور 600 روپے ہیں۔ یہ دونوں ہی ایک خوراک کے لئے تقریبا 150 روپے مرکزی حکومت سے وصول کرتے ہیں۔
Published by: Mohammad Rahman Pasha
First published: Jun 08, 2021 09:53 AM IST