ہوم » نیوز » معیشت

Budget 2021: انکم ٹیکس کا سلیب بھلے نہیں بدلا، لیکن بجٹ میں ہوئے ٹیکس سے متعلق یہ 6 بڑے اعلانات

Budget 2021: وزیر خزانہ نرملا سیتا رمن نے یکم فروری کو بجٹ پیش کیا۔ نوکری پیشہ لوگوں کو اس بار کے بجٹ سے کافی امیدیں تھیں، لیکن انکم ٹیکس کے سلیب میں کسی طرح کی تبدیلی نہیں کی گئی ہے۔

  • Share this:
Budget 2021: انکم ٹیکس کا سلیب بھلے نہیں بدلا، لیکن بجٹ میں ہوئے ٹیکس سے متعلق یہ 6 بڑے اعلانات
انکم ٹیکس کا سلیب بھلے نہیں بدلا، لیکن بجٹ میں ہوئے ٹیکس سے متعلق یہ 6 بڑے اعلانات

نئی دہلی: وزیر خزانہ نرملا سیتا رمن نے پیر کو مالی سال 22-2021 کے لئے بجٹ پیش کیا۔ اس بار کے بجٹ سے متوسط طبقہ کے نوکری پیشہ لوگوں کو کافی امیدیں تھیں۔ یہ لوگ ٹیکس میں راحت ملنے کی امید لگائے بیٹھے تھے، لیکن وزیر خزانہ نے انہیں مایوس کیا۔ آئی ٹی سلیب میں کسی بھی طرح کی تبدیلی نہیں کی گئی، اس کے باوجود وزیر خزانہ نے 6 اعلانات کئے۔


پہلا: نرملا سیتا رمن نے اس بار کے بجٹ میں 75  سال سے زیادہ عمر کے بزرگوں کو راحت فراہم کی ہے۔ اس کلاس میں آنے والے ویسے سینئر شہریوں، جن کی آمدنی کا ذریعہ صرف پنشن اور سود ہیں، انہیں انکم ٹیکس ریٹرن فائل کرنے کی ضرورت نہیں ہے۔


دوسرا: بجٹ پیش کرتے ہوئے نرملا سیتا رمن نے مرکزی حکومت کی ایک اہم اسکیم کو لے کر بھی اعلان کیا۔ انہوں نے ٹیکس سے متعلق جڑے معاملات کو پھر سے کھولنے کی مدت کو 6 سال سے کم کردکے 3 سال کرنے کا اعلان کیا ہے۔


تیسرا: وزیر خزانہ نے ٹیکس دہندگان کو راحت فراہم کی ہے۔ اب کیپٹلس گین اور سود سے ہوئی آمدنی پری فائل ہوں گی۔ مطلب اسے الگ سے کرنے کی ضرورت نہیں ہوگی۔

چوتھا: مرکزی حکومت نے انکم ٹیکس اپیلٹ ٹریبونل کو فیس لیس بنانے اور نیشنل انکم ٹیکس ٹریبونل سینٹر بنانے کی تجویز رکھی ہے۔

پانچواں: ڈیجیٹل ذرائع سے زیادہ تر کاروبار کرنے والی کمپنیوں کو ٹیکس آڈٹ سے ملنے والی چھوٹ دوگنی کرنے کا اعلان کیا گیا ہے۔

چھٹا: 50 لاکھ روپئے سے زیادہ کی آمدنی چھپانے سے متعلق معاملوں کو 10 سال کے بعد پھر سے کھولا جاسکے گا۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Feb 01, 2021 06:36 PM IST