உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Muharram 2022:تعزیہ کیاہے اوراس کی کیا اہمیت ہے؟ جانئے تمام تفصیل

    Youtube Video

    عاشورہ کربلا میں شہید ہونے والے پیغمبر اسلام حضرت محمدﷺ(Prophet Mohammad) کے نواسے امام حسینؑ (Imam Hussain) کی یوم وفات کا دن ہے۔ تعزیہ بنیادی طور پر امام حسینؑ کے مزار کی نقل ہے اور یہ متعدد شکلوں اور قدوں میں بنائیں جاتے ہیں۔

    • Share this:
      ماہ محرم الحرم (Muharram) سے ہی اسلامی نئے سال کا آغاز ہوتاہے اور اسے اسلامک ہجری کیلنڈر Islamic Hijri) (Calender میں ماہ رمضان کے بعد دوسرا مقدس ترین مہینہ مانا جاتا ہے۔ اس سال محرم 30 جون سے شروع ہوا۔ دنیا بھر کے مسلمان 10محرم کو عاشورہ کے طور پرمناتے ہیں۔ اس دن مسلمان مساجدوں اور امام بارگاہوں میں خصوصی دعااور ذکرازکار کرتے ہیں۔ عاشورہ کربلا میں شہید ہونے والے پیغمبر اسلام حضرت محمدﷺ(Prophet Mohammad) کے نواسے امام حسینؑ (Imam Hussain) کی یوم وفات کا دن ہے۔ تعزیہ بنیادی طور پر امام حسینؑ کے مزار کی نقل ہے اور یہ متعدد شکلوں اور قدوں میں بنائیں جاتے ہیں۔ تعزیہ عربی لفظ عزا سے ماخوذ ہے جس کا مطلب مرنے والوں کو یاد کرنا ہے۔

      تعزیہTaziaکو محرم کی پہلی تاریخ سے لیکر نویں تاریخ کے درمیان کسی بھی دن گھر لایا سکتا ہے۔ ان کو پھرعاشورہ کو یعنی امام حسینؑ کی شہادت کے دن دفن کیا جاتا ہے۔ لہٰذا تعزیت کا مطلب  مرحوم کے لیے احترام اور مغفریت کی دعا کرنے کو کہا جاتا ہے۔

      تعزیہ بنیادی طور پر امام حسینؑ کے مزار کی نقل ہے اور یہ متعدد شکلوں اور قدوں میں بنائیں جاتے ہیں۔
      تعزیہ بنیادی طور پر امام حسینؑ کے مزار کی نقل ہے اور یہ متعدد شکلوں اور قدوں میں بنائیں جاتے ہیں۔


      ایک لحاظ سے تعزیہ وہ علامت ہے جس سے کربلا کے سانحہ کی عکاسی کی جاتی ہے۔ تعزیہ آزاخانہ، جن کو عام طور پر امام بارگاہ کہا جاتا ہے، اسی کے اندر ہوتے ہے۔ امام بارگاہ وہ جگہ ہے جہاں پر خصوصاً امام حسینؑ اور دیگر اہلیبت علیہم السلام کی نام کے تقاریر، مرثیہ، نوحہ اور دورود ں ازکار کے ساتھ ماتم بھی کیا جاتا ہے۔

      مسلم سماج کے لوگ تعزیہ کو جلوس کی صورت میں نکالتے ہے اور یا حسینؑ یاحسینؑ کے نعرے بلند کرتے ہیں۔ تعزیہ کی آمد سے ماتم کا آغاز ہوتا ہے۔  تعزیہ کو امام بارگاہ میں رکھا جاتا اور وہاں پھول اورعطر بھی لگائی جاتی ہے اور وہاں لوگوں کی بڑی تعداد ماتم کرنے آتی ہیں۔

      لوگ تعزیہ بناتے وقت اپنی تخلیقی صلاحیتوں کا مظاہرہ کرنے کے لیے اس میں رنگ برنگے کاغذات، پھولوں، لائٹنگز اور آئینے کا استعمال کرتے ہیں۔ تعزیہ اور ڈھول کے علاوہ اونٹ، ہاتھی اور گھوڑے جیسے جانور بھی جلوس میں شامل ہوتے ہیں۔ اس سال عاشورہ کے جلوس 8 اگست کو نکلے گے۔
      Published by:Faheem Mir
      First published: