ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

Moradabad News: تہہ خانے میں بن رہی غیرقانونی شراب سے نکلی زہریلی گیس، 4 کی موت

UP News: مرادآباد کے ڈلاری تھانہ علاقے کے کیسریا گاوں میں رہنے والے راجیندر سنگھ کی اس کے دو بیٹے اور ایک نوکر کے ساتھ دم گھٹنے سے موت ہوگئی۔

  • Share this:
Moradabad News: تہہ خانے میں بن رہی غیرقانونی شراب سے نکلی زہریلی گیس، 4 کی موت
غیرقانونی شراب سے نکلی زہریلی گیس، 4 کی موت

مرادآباد: اترپردیش کے مرادآباد کے ڈلاری تھانہ علاقے کے راج پور کیسریا گاوں میں رہنے والے راجیندر سنگھ کے گھر میں اچانک 4 لوگوں کی موت کی خبر ملنے سے پورے گاوں میں ہنگامہ مچ گیا۔ گاوں والوں کی اطلاع پر موقع پر پہنچی پولیس نے راجیندر سنگھ کے گھر کے ایک کمرے کے نیچے بنے تہہ خانے نما چھوٹے سے روم سے راجیندر کے علاوہ ان کے دونوں بیٹوں اور ایک نوکر کی لاش برآمد کی۔ پولیس نے وہاں پانی کا چھڑکاو کراکر چاروں لاشوں کو قبضے میں لے کر پوسٹ مارٹم کے لئے مرادآباد بھیج دیا۔


اترپردیش کے علی گڑھ میں زہریلی شراب پینے کے بعد ہوئی اموات کا معاملہ ابھی ٹھنڈا بھی نہیں ہوا تھا کہ مرادآباد کے ڈلاری تھانہ علاقے کے کیسریا گاوں میں رہنے والے راجیندر سنگھ کی، اس کے دو بیٹے اور ایک نوکر کے ساتھ دم گھٹنے سے موت ہوگئی۔ ابتدائی تفتیش سے پتہ چلا ہے کہ راجیندر سنگھ کچی غیر قانونی شراب بناکر بیچتا تھا۔ ایک سال پہلے بھی اس کے گھر سے 250 پیٹی شراب برآمد ہوئی تھی، جس کے بعد اسے جیل بھیج دیا گیا تھا۔ جیل سے آنے کے بعد راجیندر سنگھ نے پھر اپنے دونوں بیٹوں کے ساتھ مل کر غیر قانونی شراب بنانے کا کام شروع کردیا تھا۔


حادثے کے دن بھی وہ اپنے گھر کے پاس ہی بنے دوسرے گھر میں غیر قانونی شراب بلر رہا تھا۔ اسی دوران کسی زہریلی گیس سے ایک ایک کرکے راجیندر سنگھ کے ساتھ ہی اس کے دونوں بیٹے اور نوکر بے ہوش ہوگئے۔ کافی دیر تک جب اندر سے کوئی آواز نہیں آئی تو باہر بیٹھی راجیندر سنگھ کی اہلیہ پھول وتی وہاں پہنچی تو چاروں کو بے ہوشی کی حالت میں دیکھا۔ پھول وتی نے آس پاس کے لوگوں کو جمع کیا۔ وہاں پہنچے لوگوں نے باپ- بیٹے اور نوکر کو آواز دی، لیکن کسی کے جسم میں حرکت نہیں ہوئی اور عجیب سی بدبو وہاں پھیلی ہوئی تھی، جس سے لوگوں کو سانس لینے میں بھی تکلیف ہو رہی تھی۔ اس کے بعد گاوں کے لوگوں نے پولیس کو اطلاع دی۔


فورنسک ٹیم جانچ میں مصروف

موقع پر پہنچی پولیس نے حالات دیکھ کر اندازہ کرلیا تھا کہ کسی زہریلی گیس کے پھیلنے سے ہی 4 لوگوں کی موت ہوئی ہے۔ پولیس نے وہاں پانی کا چھڑکاو کراکر وہاں پھیلی گیس کے اثر کو کم کیا اور چاروں لوگوں کو وہاں سے باہر نکالا۔ تب تک سبھی کی موت ہوچکی تھی۔ پولیس نے چاروں لاش کو پوسٹ مارٹم کے لئے مرادآباد بھیج دیا۔ چار لوگوں کی موت کی اطلاع ملنے پر مرادآباد کے ایس ایس پی پون کمار موقع پر پہنچ گئے اور فورنسک محکمہ کی ٹیم کو بلاکر ثبوت جمع کرکے تفتیش شروع کرنے کے احکامات دیئے۔

مرادآباد سے فرید شمسی کی رپورٹ

 
Published by: Nisar Ahmad
First published: Jun 22, 2021 08:27 AM IST