ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

بہار میں دوہرائی گئی ہاتھرس سانحہ، آبروریزی کے بعد قتل کرکے نابالغ کی لاش کو جلا دیا، ایس ایچ او معطل

Motihari Gang Rape: بہار کے موتیہاری (Motihari) میں ہوئے دہلا دینے والی اس حادثہ میں تھانہ انچارج کا کردار شک کے دائرے میں ہے۔ معاملے کی جانچ کے لئے پہنچے نے تھانہ ایس ایچ او کو فوری طور پر معطل کردیا ہے۔

  • Share this:
بہار میں دوہرائی گئی ہاتھرس سانحہ، آبروریزی کے بعد قتل کرکے نابالغ کی لاش کو جلا دیا، ایس ایچ او معطل
آبروریزی کے بعد قتل کرکے نابالغ کی لاش کو جلا دیا، ایس ایچ او معطل

مشرقی چمپارن: بہار کے مشرقی چمپارن میں اترپردیش کے ہاتھرس اجتماعی آبروریزی (Hathras Rape) کی طرز پر ایک حادثہ ہوا ہے۔ معاملہ ضلع کے کنڈوا چین پور سے جڑا ہے۔ الزام ہے کہ یہاں تقریباً ایک ہفتے پرانے حادثہ میں ایک 12 سالہ بچی کے ساتھ اجتماعی آبروریزی (Gang Rape) کرنے کے بعد دبنگوں نے اس کا قتل کردیا تھا۔ الزام یہ بھی ہے کہ بچی کے قتل کے بعد ثبوت مٹانے کے لئے مہلوک کی لاش کو رات کے اندھیرے میں جلا دیا گیا۔ بچی کی لاش کو جلانے کا ایک ویڈیو سامنے آیا ہے۔ اس ویڈیو میں بچی کی لاش کو جلاتے ہوئے لوگ نظر آرہے ہیں۔ یہاں ملزمین کے علاوہ لڑکی کی رو رہی ماں اور اس کا والد بھی موجود ہے۔ اس معاملے میں ایس ایچ او (SHO) کو معطل کر دیا گیا ہے۔


بتایا جاتا ہے کہ مہلوک بچی کی لاش کو رات میں کنڈوا چین پور - پرسا روڈ میں سڑک کے کنارے جلا دیا گیا۔ بچی کی لاش کو جلانے کے لئے لکڑی کے علاوہ مٹی تیل، چینی اور نمک کا استعمال کیا گیا، تاکہ کوئی ثبوت نہ بچے۔ لاش جلانے میں لگے لوگ آگ میں گلین سے مٹی کا تیل ڈالتے ہوئے نظر آرہے ہیں، جبکہ ایک عورت کی رونے کی آواز سنائی دے رہی ہے، جو اس کی ماں کی آواز بتائی جارہی ہے۔ اس کا ذکر مہلوک کے والدنے پولیس کو دی گئی درخواست میں بھی کی ہے۔


حادثہ کی جانچ کے لئے ایس پی نوین چندر جھا کنڈوا چین پور تھانہ پہنچے۔ ایس پی نے جائے حادثہ کا دورہ کیا، ساتھ ہی پولیس افسران سے حادثہ کو لے کر کئی نکات پر جانکاری لی۔ ایس پی نے ملزمین کی گرفتاری جلد کرنے کا حکم دیا ہے۔ ایس پی نوین چندر جھا نے حادثہ میں تھانہ انچارج کے کردار کو لے کر اٹھ رہے سوالوں کے موضوع پر بھی تفتیش کی۔ اس دوران ایس پی سے ملنے ملزمین کے گھر کی خاتون اہل خانہ بھی پہنچیں۔


خواتین نے زمینی تنازعہ کو لے کر ان کے گھر کے لوگوں کو اس معاملے میں پھنسا دینے کی بات کہی۔ ایس پی نے ملزمین کے خاتون اہل خانہ کو بچاو میں ثبوت دینے اور اپنی باتوں کو تحریر میں دینے کے لئے کہا۔ ضلع کے کنڈوا چین پور تھانہ علاقے کے کنڈوا بازار میں 12 سالہ نابالغ بچی کے ساتھ آبروریزی کرکے اس کا قتل کردیا گیا۔ الزام ہے کہ ملزمین نے تھانہ انچارج سے مل کر بچی کی لاش کو جلا دیا۔ مہلوک بچی کے والدین کو ڈرا دھمکا کر ملزمین نے خاموش کرا دیا، لیکن حادثہ کے قریب ایک ہفتے کے بعد مہلوک بچی کے والد نے سکرہنہ ایس ڈی پی او کو درخواست دے کر ایف آئی آر درج کرنے کی گزارش کی، جس کے بعد معاملہ سامنے آیا۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Feb 08, 2021 04:55 PM IST