உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Breaking: مرکزی وزیر مختار عباس نقوی نے اپنے عہدے سے دیا استعفیٰ

    مختار عباس نقوی وزیر اعظم نریندر مودی کی کابینہ میں اقلیتی وزارت کا چارج سنبھال رہے تھے۔ وہ پچھلی حکومت میں مرکزی وزیر تھے۔ ان کی راجیہ سبھا کی میعاد اس ماہ ختم ہو رہی ہے۔

    • Share this:
      مرکزی وزیر مختار عباس نقوی نے اپنے عہدے سے استعفیٰ دے دیا ہے۔ مختار عباس نقوی وزیر اعظم نریندر مودی کی کابینہ میں اقلیتی وزارت کا چارج سنبھال رہے تھے۔ وہ پچھلی حکومت میں مرکزی وزیر تھے۔ ان کی راجیہ سبھا کی میعاد اس ماہ ختم ہو رہی ہے۔ بی جے پی نے انہیں راجیہ سبھا کا ٹکٹ نہیں دیا تھا جس کے بعد یہ طے ہو گیا تھا کہ انہیں کابینہ سے استعفیٰ دینا پڑے گا۔

      دوسری جانب مرکزی کابینہ میں شامل ایک اور وزیر آر سی پی سنگھ کی مدت کار میں بھی توسیع نہیں کی گئی، اس لیے وہ بھی آج استعفیٰ دے سکتے ہیں۔

      پی ایم مودی نے کی تعریف
      استعفیٰ دینے سے پہلے نقوی نے بی جے پی صدر جے پی نڈا سے ملاقات کی تھی۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق وزیر اعظم نریندر مودی نے کابینہ کی میٹنگ میں ملک اور عوام کی خدمت میں نقوی کے تعاون کی تعریف کی ہے۔ نقوی مرکزی حکومت میں اقلیتی امور کے وزیر تھے اور راجیہ سبھا میں بی جے پی کے ڈپٹی لیڈر بھی تھے۔ راجیہ سبھا میں ان کی میعاد 7 جولائی کو ختم ہو رہی ہے۔ پارٹی اب انہیں نیا کردار سونپ سکتی ہے۔ حالانکہ نقوی کا نام نائب صدر کے امیدوار کے طور پر بھی زیر بحث ہے۔

      مختار عباس نقوی نے کی جے پی نڈا سے ملاقات کی تھی
      کابینہ کی میٹنگ کے بعد نقوی نے بھارتیہ جنتا پارٹی (BJP) کے صدر جے پی نڈا سے ملاقات کی تھی۔ ملاقات کے دوران سرکاری طور پر اس بارے میں کچھ نہیں بتایا گیا تھا کہ دونوں رہنماؤں کے درمیان کیا اور کس معاملے پر بات ہوئی لیکن ذرائع کا کہنا ہے کہ اس دوران نقوی کے مستقبل کے رول کے بارے میں بات چیت ہوئی۔ نقوی اس وقت مرکزی حکومت میں اقلیتی امور کے وزیر ہیں اور راجیہ سبھا میں بی جے پی کے ڈپٹی لیڈر ہیں۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: