உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    یوپی اسمبلی انتخابات سے قبل شاعر منور رانا نے کہا- آئندہ پانچ سال میں یوگی آگئے تو ہم زندہ نہیں رہیں گے

    یوپی اسمبلی انتخابات سے قبل شاعر منور رانا نے کہا- آئندہ پانچ سال میں یوگی آگئے تو ہم زندہ نہیں رہیں گے

    یوپی اسمبلی انتخابات سے قبل شاعر منور رانا نے کہا- آئندہ پانچ سال میں یوگی آگئے تو ہم زندہ نہیں رہیں گے

    اترپردیش اسمبلی انتخابات (UP Elections 2022) میں ہونے والے اسمبلی انتخابات سے قبل اپنے بیانات کی وجہ سے سرخیوں میں رہنے والے مشہور شاعر منور رانا (Munawwar Rana) پھر سے سرخیوں میں ہیں۔ یوپی اسمبلی انتخابات کو لے کر جاری سیاسی گھمسان کے درمیان شاعر منور رانا (Munawwar Rana News) نے وزیر اعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ (Yogi Adityanath) کو نشانے پر لیا اور کہا کہ آئندہ پانچ سال میں یوگی آگئے تو ہم زندہ نہیں بچیں گے۔

    • Share this:
      لکھنو: اترپردیش اسمبلی انتخابات (UP Elections 2022) میں ہونے والے اسمبلی انتخابات سے قبل اپنے بیانات کی وجہ سے سرخیوں میں رہنے والے مشہور شاعر منور رانا (Munawwar Rana) پھر سے سرخیوں میں ہیں۔ یوپی اسمبلی انتخابات کو لے کر جاری سیاسی گھمسان کے درمیان شاعر منور رانا (Munawwar Rana News) نے وزیر اعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ (Yogi Adityanath) کو نشانے پر لیا اور کہا کہ آئندہ پانچ سال میں یوگی آگئے تو ہم زندہ نہیں بچیں گے۔ اتنا ہی نہیں، انہوں نے یہ بھی کہا کہ وہ نقل مکانی کرنے کے لئے بھی تیار بیٹھے ہیں۔

      یوپی اسمبلی انتخابات کے پیش نظر مشہور شاعر منور رانا نے کہا کہ پانچ سال میں تو ہم بچ گئے، مگر آئندہ سال میں یوگی آگئے تو ہم زندہ نہیں بچیں گے۔ مرنا تو ویسے ہی ہے، لیکن بے موت نہیں مرنا چاہتا۔ بی جے پی کے لیڈر نقل مکانی کرنے والے کو مغربی یوپی میں تلاش رہے ہیں، مگر میں یہاں بیٹھا ہوں نقل مکانی کے لئے، مجھ سے کوئی نہیں مل رہا ہے۔ میں اسی ملک میں مروں گا، وہ لوگ اور تھے جو کراچی چلے گئے۔

      معروف شاعر منور رانا اس سے قبل اپنے کئی بیانات کو لے کر سرخیوں میں رہ چکے ہیں۔ گزشتہ دنوں منور رانا نے مہارشی والمیکی کا موازنہ طالبانی دہشت گردوں سے کیا تھا۔ اس بیان پر اکھل بھارتیہ ہندو مہاسبھا کے ترجمان نے حضرت گنج تھانے میں تحریر دی تھی، جس پر پولیس نے کیس درج کرلیا تھا۔ مہا سبھا نے تحریر میں منور رانا کی کارروائی کا مطالبہ کیا تھا۔ ہندو وادی تنظیم کے لیڈر سے ششر چترویدی نے مقدمہ درج کرایا تھا۔

      واضح رہے کہ اترپردیش میں سات مرحلوں میں اسمبلی انتخابات 10 فروری سے شروع ہو رہے ہیں۔ اترپردیش میں دوسرے مرحلے کا الیکشن 14 فروری کو، تیسرے مرحلے میں 20 فروری کو، چوتھے مرحلے میں 23 فروری کو، پانچویں مرحلے میں 27 فروری کو، چھٹے مرحلے میں تین مارچ کو اور ساتویں و آخری مرحلے میں 7 مارچ کو ہوگا۔ اترپردیش کی 403 اسمبلی سیٹوں کے لئے ووٹنگ 10 مارچ کو ہوگی۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: