உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Janmashtami 2022: جنم اشٹمی پر فیض محمد نے پیش کی انسانیت کی مثال، ماں نے برقع پہن کر پہنایا مکٹ

    کانہا کے لُک میں اسکول جاتے ہوئے مسلم بچے فیض کا ویڈیو وائرل۔ (تصویر: ٹوئٹر)

    کانہا کے لُک میں اسکول جاتے ہوئے مسلم بچے فیض کا ویڈیو وائرل۔ (تصویر: ٹوئٹر)

    جنم اشٹمی (Janmashtmi) کے موقع پر سوشل میڈیا پر ایک دل کو چھو لینے والا ویڈیو شیئر کیا گیا۔ اس میں ایک مسلم خاتون نے اپنے بچے کو کانہا (Muslim Kid As Kanha) کی طرح تیار کیا۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Delhi | Mumbai | Lucknow | Chennai | Kolkata
    • Share this:
      ہندوستان میں کئی مذہب کے لوگ ایک ساتھ رہتے ہیں۔ یہاں دیوالی بھی دھوم دھام سے منائی جاتی ہے اور عید بھی۔ بھلے ہی کوئی کتنا بھی فرقہ وارانہ اختلاف پیدا کرنے کی کوشش کرے، لیکن یہاں کے لوگوں کے من میں ایک دوسرے کے لئے کافی محبت بھی ہے۔ آئے دن ایسے کچھ ویڈیوز (Viral Video) سامنے آتے ہیں، جس میں الگ الگ مذاہب والے لوگ آپس میں ایک ساتھ نظر آتے ہیں۔ ایسا ہی ایک ویڈیو سوشل میڈیا (Social Media) سائٹ پر سامنے آیا۔ اس میں ایک مسلم خاتون کو اپنے بچے کو بال کرشن کی طرح تیار کرکے اسکول پہنچاتے ہوئے دیکھا گیا۔

      ہندوستان میں آج ہر طرف جنم اشٹمی کی دھوم دیکھی گئی۔ ہر اسکول کالج میں اس تہوار کو منایا گیا۔ بچے رادھا کرشن کی طرح تیار ہوکر اسکول جاتے ہوئے نظر آرہے ہیں۔ والدین بھی اپنے بچوں کو اچھے سے تیار کرکے اسکول بھیجتے ہوئے نظر آئے۔ اس درمیان ٹوئٹر پر ویڈیو شیئر کیا گیا، جہاں ایک مسلم خاتون کو اپنے بچے کو کانہا کی طرح تیار کرکے اسکول پہنچاتے ہوئے دیکھا گیا۔ خاتون نے اپنے بچے کو پیلے کپڑے میں کانہا کا لُک دیا۔

      یہ بھی پڑھیں۔

      لشکر طیبہ اور البدر کو حوالہ کے ذریعہ ٹیرر فنڈنگ کرنے کا الزام میں محمد یٰسین دہلی سے گرفتار

      ملک کا اتحاد دیکھنے کو ملا

      سوشل میڈیا سائٹ ٹوئٹر پر آئی اے ایس اونیش شرن نے یہ پیارا سا ویڈیو شیئر کیا۔ ویڈیو کے کیپشن میں انہوں نے لکھا ’میرا ملک‘۔ اس کے ساتھ ہی ایک ہارٹ ایموجی بھی پوسٹ کیا۔ بچے نے اپنا نام فیض بتایا۔ گھر کے باہر کانہا کے لُک میں کھڑے بچے کا ویڈیو بنایا جا رہا تھا، لیکن جیسے ہی بچے کی ماں باہر آئی، سب حیران رہ گئے۔ بچے کی ماں نے برقع پہن رکھا تھا۔ ایک مسلم بچے کا کانہا کی طرح تیار ہوکر اسکول جانے کا ویڈیو وائرل ہو گیا۔

       



      لوگوں نے کی تعریف

      جہاں چھوٹی چھوٹی باتوں پر کچھ لوگ فساد بھڑکانے کی کوشش کرتے ہیں۔ وہیں اس ویڈیو نے دکھا دیا کہ ہندوستان کے لوگ آج بھی متحد ہیں۔ اس ویڈیو کو پوسٹ ہونے کے بعد سے لاکھوں بار دیکھا جاچکا ہے۔ اس کے ساتھ ہی اس پر جم کر کمنٹ بھی کئے گئے۔ لوگوں کو یہ بات کافی اچھی لگی کہ اب بچوں کو مذہب کی بنیاد پر تقسیم کرنے کا کام نہیں کیا جا رہا ہے۔ بچے ہر مذہب کا احترام کرتے ہیں اور سبھی کو ایک طرح سے ہی دیکھنے کی کوشش کر رہے ہیں۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: