உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    مسلم نوجوان کا الزام، جے شری رام نہیں بولا، اس لئے مجھے پیٹا گیا

    مسلم نوجوان کے ساتھ مارپیٹ۔

    مسلم نوجوان کے ساتھ مارپیٹ۔

    محمد مومن نامی نوجوان کا الزام ہے کہ کار کے اندربیٹھے کچھ لوگوں نے جے شری رام کا نعرہ لگانے کے لئے کہا تھا، ایسا نہ کرنے پرمیری پٹائی کی گئی ہے۔ 

    • Share this:
      دہلی کے روہنی سیکٹر20 میں محمد مومن نامی مسلم نوجوان کا الزام ہےکہ ایک کارکے اندربیٹھے کچھ لوگوں نے انہیں 'جے شری رام' کا نعرہ لگانے کے لئے کہا تھا۔ جب میں نے ایسا نہیں کیا تو میری پٹائی کی گئی، جس کی وجہ سے مجھے چوٹیں آئی ہیں۔

      میڈیا میں آئی خبروں کے مطابق محمد مومن نامی نوجوان نے جمعرات کو زخمی ہونے کی رپورٹ درج کرائی تھی۔ ان کا کہنا تھا کہ اسے ایک کارنے ٹکرماری، جس میں اسے چوٹ لگی۔ اس معاملے میں ڈی سی پی روہنی ایس ڈی مشرا نے کہا کہ ہم نے ایکسڈینٹ (حادثہ) کا معاملہ درج کیا ہے۔

      حالانکہ محمد مومن نے دعویٰ کیا ہے کہ تین لڑکے، جو ایک سفید کار میں تھے، نے انہیں کچھ مذہبی الفاظ کہنے کے لئے کہا تھا، جب انہوں نے انکار کردیا تو انہوں نے پیٹا۔ اب ہم اس الزام کی تحقیق کررہے ہیں۔ سی سی ٹی وی فوٹیج کی جانچ کی جائے گی۔

      محمد مومن کا الزام ہے کہ کارمیں موجود نوجوانوں نے اسے دھمکایا اورگالی بھی دی۔ بہرحال یہ پورا معاملہ کیا ہے، اب پولیس تحقیق کے بعد ہی واضح ہوسکے گا۔ تاہم محمد مومن نامی نوجوان کے مطابق اسے 'جے شری رام' کا نعرہ نہیں لگانے کے سبب دھکا دے دیا گیا اورپٹائی کی گئی۔  



      First published: