ہوم » نیوز » وطن نامہ

حج 2020: 2بارتاریخ میں توسیع کے بعد بھی درخواستوں کے ادخال میں کمی، کیا ہے وجہ پڑھیں یہاں

دوبارآن لائن فارم بھرنے کی تاریخ بڑھائے جانے کے باوجود بھی کئی ریاستوں میں ریاستی حج کمیٹیوں کومطلوبہ ہدف نہیں مل سکاہے

  • Share this:
حج 2020: 2بارتاریخ میں توسیع کے بعد بھی درخواستوں کے ادخال میں کمی، کیا ہے وجہ پڑھیں یہاں
فائل فوٹو

یہ سوال بہت اہم ہے کہ اس بارحج کے لئے درخواستیں دینے والے عازمین کی تعداد کیوں کم ہوئی ہے۔اتر پردیش میں بھی غیرمعمولی کمی دیکھی جارہی ہے۔دوبارآن لائن فارم بھرنے کی تاریخ بڑھائے جانے کے باوجود بھی کئی ریاستوں میں ریاستی حج کمیٹیوں کومطلوبہ ہدف نہیں مل سکاہے۔ بڑا سبب مہنگائی اور سبسڈی ختم کئے جانے کو مانا جارہا ہے تاہم حکومت کے مطابق اسباب کچھ اورہیں اور س بارے میں ابھی کچھ کہناجلد بازی ہے

یہ بات چونکانے والی ہے کہ 2020 میں حج پر جانے والے عازمین نے ابھی تک گزشتہ سال کی بنسبت بہت کم فارم بھرے ہیں۔سبسڈی ختم کئے جانے اور رقم میں اضافہ ہونے کے سبب یہ صورت حال سامنے آنے کی بات کی جارہی ہے۔حالانکہ اترپردیش کے وزیربرائے حج و اقلیتی بہبود یہ بات ماننےکو تیارنہیں۔۔

محسن رضا صاف اقرارکرنے کے بجائے بات کوادھرادھر گھمانے کی کوشش کررہے ہیں اس سلسلے میں جب حج کمیٹی کے سکریٹری سے بات کی گئی تو انہوں نے کچھ بھی بولنے سے یہ کہہ کر انکار کردیا کہ اس موضوع پر منتری جی ہی بول سکتے ہیں۔ مجھے اجازت نہیں۔ فارم جمع کرنے کی آخری تاریخ 5 دسمبر ہےاورابھی تک صرف 22 ہزار چارسوفارم موصول ہوئے ہیں۔ جبکہ گزشتہ سال تقریباّ 35 ہزار فارم جمع کیے گئے تھے۔یہ تاریخ پہلے10 اکتوبر مقرر کی گئی تھی بعد میں 10 نومبر کی گئی اور لگتا ہے کہ حالت یہی رہی تو ایک بارپھربڑھائی جاسکتی ہے۔

حج 2020: عازمین حج کے راحت کی خبر، 24 گھنٹے انفارمیشن سینٹر انجام دے گا خدمات۔(تصویر:نیوز18 اردو)۔ حج 2020: عازمین حج کے راحت کی خبر، 24 گھنٹے انفارمیشن سینٹر انجام دے گا خدمات۔(تصویر:نیوز18 اردو)۔ افسران بھلے ہی مجبور ہوں۔حکومت کے وزیر کوئی بھی جوازپیش کریں لیکن عوام کی اپنی آواز ہے اپنا احساس ہے عازمین کی تعداد میں کمی واقع ہونے کا بڑا سبب مہنگا ہوتا حج ہے رقم میں اضافےاورسبسڈی ختم ہونے کے ساتھ مکمل آن لائن سسٹم کو بھی ذمہ دارماناجاسکتاہے لیکن حج کمیٹی سے جڑے تجربے کار لوگ آف دی کیمرہ یہ اظہار کرتے ہیں کہ سب سے بڑی وجہ مہنگائی ہے اور اسی وجہ سے صرف اتر پردیش میں ہی نہیں بلکہ ملک کی دوسری ریاستوں میں بھی ابھی تک فارم گزشتہ سال کی بنسبت خاصے کم بھرے گئے ہیں
نیوز18 اردو کے لیے لکھنؤ سے طارق قمر لکھنئو
First published: Dec 03, 2019 11:50 PM IST