ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

نگروٹہ انکاونٹر پر وزیر اعظم مودی نے کہا- پاکستان کے خطرناک منصوبوں کا سیکورٹی اہلکاروں نے دیا زبردست جواب

جموں وکشمیر - سری نگر ہائی وے پر نگروٹہ (Nagrota) پر سیکورٹی اہلکاروں نے ٹرک میں چھپ کر جارہے دہشت گردوں کو مار گرایا ہے۔ ذرائع بتاتے ہیں کہ جیش محمد (jaish E Mohammad) سے تعلق رکھنے والے یہ دہشت گرد 26/11 کی برسی پر بڑی سازش کر رہے تھے۔

  • Share this:
نگروٹہ انکاونٹر پر وزیر اعظم مودی نے کہا- پاکستان کے خطرناک منصوبوں کا سیکورٹی اہلکاروں نے دیا زبردست جواب
نگروٹہ انکاونٹر پر وزیر اعظم مودی نے کہا- پاکستان کے خطرناک منصوبوں کو سیکورٹی اہلکاروں نے دیا زبردست جواب

نئی دہلی: جموں وکشمیر (Jammu Kashmir) کے نگروٹہ (Nagrota) میں ہوئی سیکورٹی اہلکاروں اور دہشت گردوں کے درمیان تصادم میں ہندوستان کے ہاتھوں کامیابی لگی ہے۔ سیکورٹی اہلکاروں کی اس جیت پر وزیر اعظم نریندر مودی (PM Narendra Modi) نے بھی مبارکباد دی ہے۔ انہوں نے ٹوئٹ کیا کہ ایک بار پھر ہمارے جوانوں نے دہشت گردوں کی تباہی کی کوشش کو ناکام کردیا ہے۔ اتنا ہی نہیں، انہوں نے سیکورٹی اہلکاروں کے جوانوں کی بہادری کی بھی جم کر تعریف کی۔ وزیر اعظم نریندر مودی نے جوانوں کی بہادری کی تعریف کرتے ہوئے ایک ٹوئٹ کیا ہے۔ انہوں نے لکھا کہ پاکستان میں موجود دہشت گرد تنظیم جیش محمد کے 4 دہشت گردوں کو ہلاک کرنا اور بڑی مقدار میں ہتھیار اور دھماکہ خیز مادہ کی موجودگی یہ بتاتی ہے کہ بڑی تباہی کی کوششوں کو ایک بار پھر سے ناکام کردیا ہے۔


ایک دیگر ٹوئٹ میں وزیر اعظم نریندر مودی نے لکھا، ’ہمارے سیکورٹی اہلکاروں نے ایک بار پھر زبردست بہادری دکھائی ہے۔ انہوں نے چاق وچوبند رہنے کے سبب جموں وکشمیر میں ہونے والے زمینی سطح کی جمہوری کوششوں کو ہرایا ہے’۔ وزیر اعظم مودی نے معاملے کو لے کر ایک جائزہ میٹنگ بلائی تھی، جس میں وزیر داخلہ امت شاہ، قومی سلامتی کے مشیر اجیت ڈوبھال، خارجہ سکریٹری ہرش وردھن شرنگلا شامل ہوئے تھے۔


 جموں وکشمیر شاہراہ پر جمعرات کو ہوئے تصادم میں جیش محمد کے چار مشتبہ دہشت گرد مارے گئے جبکہ دو پولیس اہلکار زخمی ہوگئے۔

جموں وکشمیر شاہراہ پر جمعرات کو ہوئے تصادم میں جیش محمد کے چار مشتبہ دہشت گرد مارے گئے جبکہ دو پولیس اہلکار زخمی ہوگئے۔


جموں وکشمیر شاہراہ پر تصادم میں جیش محمد کے 4 دہشت گرد ہلاک

جموں وکشمیر شاہراہ پر جمعرات کو ہوئے تصادم میں جیش محمد کے چار مشتبہ دہشت گرد مارے گئے جبکہ دو پولیس اہلکار زخمی ہوگئے۔ پولیس کے اعلیٰ افسران نے یہ اطلاع دی۔ افسران نے بتایا کہ جموں شہر کے باہری علاقے میں، حال ہی میں دراندازی کرنے والے دہشت گردوں کو لا رہے ایک ٹرک کو روکا گیا، تبھی تصادم شروع ہوگیا۔ جموں کے انسپکٹر جنرل پولیس مکیش سنگھ نے کہا کہ دہشت گرد ’بڑی سازش‘ کو انجام دینے کے ارادے سے آئے تھے، جسے ناکام کردیا گیا ہے۔ سیکورٹی اہلکاروں کی اس کامیابی پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے کہا، ’کوئی بھی باہری طاقت امن وامان اور ترقی کی رفتار کے ہمارے راستے سے ہمیں نہیں بھٹکا سکتی’۔

کشمیر کے پولیس انسپکٹر جنرل وجے کمار نے سری نگر میں کہا کہ چار دہشت گرد اس ماہ کے آخر میں ہونے والے ڈسٹرکٹ ڈیولپمنٹ کونسل (ڈی ڈی سی) الیکشن کے عمل میں رخنہ اندازی کرنا چاہتے تھے کیونکہ پاکستان سیاسی عمل میں رخنہ ڈالنے کی کوشش کر رہا ہے۔ وہیں، جموں کے پولیس انسپکٹر جنرل مکیش سنگھ نے جموں میں صحافیوں کو تفصیلی جانکاری دیتے ہوئے کہا کہ ڈی سی سی الیکشن کے پروگرام کا اعلان ہونے کے بعد سے پولیس کو جموں وکشمیر میں دہشت گردوں کے ذریعہ ممکنہ دراندازی کئے جانے کی اطلاعات مل رہی ہیں۔ مکیش سنگھ نے کہا، ’ہم نے اپنی سبھی ٹیموں کو چوکیوں پر تعینات کیا تھا۔ خفیہ اطلاع ملی تھی کہ دہشت گرد بھاری مقدار میں ہتھیار اور دھماکہ خیز مادہ کے ساتھ دراندازی کرسکتے ہیں’۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Nov 20, 2020 06:44 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading