ہوم » نیوز » وطن نامہ

جامعہ ملیہ اسلامیہ میں روزگارپرمبنی کورسیز لانے کی پہل کی جائے گی : وائس چانسلرپروفیسرنجمہ اختر

نئی وائس چانسلرپروفیسرنجمہ اخترنے نیوز18 اردو سے بات چیت کے دوران عزائم کا کیا اظہار

  • Share this:
جامعہ ملیہ اسلامیہ میں روزگارپرمبنی کورسیز لانے کی پہل کی جائے گی : وائس چانسلرپروفیسرنجمہ اختر
جامعہ ملیہ اسلامیہ کی وائس چانسلرپروفیسرنجمہ اختر: فائل فوٹو

پروفیسرنجمہ اخترنے جامعہ ملیہ اسلامیہ میں وائس چانسلرکی حثیثت سے اپنے عہدہ کاچارج سنبھالیا ہے۔نجمہ اختر نے اپنے عزائم کااظہارکرتے ہوئے کہا کہ جامعہ ملیہ اسلامیہ میں روزگارپرمبنی کورسیز لانے کی پہل کی جائے گی۔ نجمہ اخترکاکہناہے کہ وہ چاہتی ہیں کہ پچاس فیصد لڑکیاں یونیوسٹی میں تعلیم حاصل کریں۔انہوں نے کہا کہ جامعہ ملیہ کے اقلیتی کردارپرکوئی آنچ نہیں آئے گی۔


تقریباًچاردہائیوں سے تعلیم کے شعبے میں کام کررہیں ماہر تعلیم پروفیسر نجمہ اختر علی گڑھ مسلم یونیورسٹی سے گولڈ میڈلسٹ ہیں۔انہوں نے تعلیم کے شعبے میں نمایاں کارکردگی کا مظاہرہ کیاہے۔ پروفیسر نجمہ اختر نیشنل انسٹی ٹیوٹ آف پلاننگ اینڈ ایڈمنسٹریشن کی ممبر بھی ہیں۔ انہوں نےکروکشیتر یونیورسٹی سے پی ایچ ڈی کی ڈگری حاصل کی ہے۔نیوز18 اردو کے نمائندے خرم شہزاد نے جامعہ ملیہ اسلامیہ کی نئی وائس چانسلرپروفیسر نجمہ اخترسے خصوصی بات چیت کی ۔


جمعرات کے روزصدرجمہوریہ نے انکی تقرری کاحکمنامہ جاری کیا تھا۔ جامعہ ملیہ اسلامیہ کی چھیانوے سالہ تاریخ میں ایسا پہلی مرتبہ ہوا کہ کسی خاتون کو سب سے اعلیٰ عہدہ ملا ہے۔ نجمہ اختر دہلی کی کسی بھی سینٹرل یونیورسٹی کی پہلی خاتون وائس چانسلربن گئیں ہیں۔

First published: Apr 12, 2019 05:29 PM IST