بی جے پی نے سنگھ کے اشارہ پر 7 کروڑ مسلم اور دلت ووٹرز کے نام حذف کردئیے: ندیم جاوید کا الزام

ندیم جاوید نے ورکروں سے واضح طور پر کہا کہ انہیں حوصلہ نہیں کھونا چاہیے بلکہ پُراعتماد انداز میں انتخابی سرگرمیوں میں انہیں حصہ لینا ہوگا ۔

Aug 30, 2018 01:29 PM IST | Updated on: Aug 30, 2018 01:29 PM IST
بی جے پی نے سنگھ کے اشارہ پر 7 کروڑ مسلم اور دلت ووٹرز کے نام حذف کردئیے: ندیم جاوید کا الزام

تصویر ندیم جاوید کے ٹوئیٹر پیج سے۔

 کل یہاں کل ہند کانگریس کمیٹی اقلیتی شعبہ کے چیئرمین ندیم جاوید نے الزام عائد کیا ہے کہ آئندہ لوک سبھا انتخابات کے پیش نظر سنگھ پریوار کے اشارے پر برسراقتدار پارٹی بی جے پی نے مسلمانوں اوردلتوں کے تقریباً سات کروڑ رائے دہندگان کے نام ووٹر لسٹ حذف کر دئیے ہیں۔ مہاراشٹر کانگریس کمیٹی کے ممبئی جنوب وسطی دادرمیں واقع دفترتلک بھون میں ریاست کے صدور اور عہدیداران کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ 2019 میں ہونے والے لوک سبھا انتخابات کافی اہمیت کے حامل ہیں اور فرقہ پرستوں کو شکست فاش دینے کے لیے کمر کس لینا ہوگا۔

ندیم جاوید نے ورکروں سے واضح طور پر کہا کہ انہیں حوصلہ نہیں کھونا چاہیے بلکہ پُراعتماد انداز میں انتخابی سرگرمیوں میں انہیں حصہ لینا ہوگا تاکہ کانگریس صدر راہل گاندھی کی قیادت میں پارٹی کو اقتدار تک پہنچایا جائے ۔

ندیم جاوید نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ آسام میں غیرملکیوں کا مسئلہ لوک سبھا انتخابات تک بی جے پی کے ایجنڈے پر ہوگا، اسی طرح سنگھ  پریوار ایک حربہ ووٹر لسٹ سے ناموں کوحذف کرنے کا اختیار کیے ہوئے ہے اور یہی طریقہ آج وہ بوتھ منیجمنٹ کے طور پر استعمال کیے ہوئے ہیں۔ان کی کوشش ہے کہ دلت اور اقلیتوں کو کس طرح پولنگ بوتھ سے دور رکھا جائے اور اس مقصد کے تحت انہوں ووٹر لسٹ سے ناموں کو حذف کردیا ہے، جن کی تعداد کروڑ وں میں ہے۔

Loading...

Loading...