உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    نیشنل ہیرالڈ کیس میں کانگریس کے سینئر لیڈر ملکارجن کھڑگے سے ED نے کی پوچھ گچھ

    نیشنل ہیرالڈ کیس میں کانگریس کے سینئر لیڈر ملکارجن کھڑگے سے ED  نے کی پوچھ گچھ (ANI Pic)

    نیشنل ہیرالڈ کیس میں کانگریس کے سینئر لیڈر ملکارجن کھڑگے سے ED نے کی پوچھ گچھ (ANI Pic)

    National Herald Case : نیشنل ہیرالڈ معاملہ میں انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ نے پیر کو کانگریس کے سینئر لیڈر ملکارجن کھڑگے سے پوچھ گچھ کی۔ ای ڈی نے انہیں نوٹس بھیج کر پیش ہونے کیلئے کہا تھا۔

    • Share this:
      نئی دہلی : نیشنل ہیرالڈ معاملہ میں انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ نے پیر کو کانگریس کے سینئر لیڈر ملکارجن کھڑگے سے پوچھ گچھ کی۔ ای ڈی نے انہیں نوٹس بھیج کر پیش ہونے کیلئے کہا تھا۔ وہ پیر کی صبح 11 بجے انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ کے دفتر پہنچے۔ اس معاملہ میں کانگریس کی عبوری صدر سونیا گاندھی اور سابق صدر راہل گاندھی بھی ملزم ہیں ۔ انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ نیشنل ہیرالڈ کیس میں مبینہ مالی بے ضابطگیوں کی تحقیقات کر رہا ہے ۔

       

      یہ بھی پڑھئے : سعودی حکومت کی نئی گائیڈلائنس کا بہار کے عازمین پر پڑا ہے بڑا اثر، جانئے کیسے


      ینگ انڈین پرائیویٹ لمیٹڈ نے کانگریس پر ایسوسی ایٹیڈ جرنلس لمیٹیڈ کے حصول میں دھوکہ دھڑی ، سازش اور مجرمانہ وعدہ خلاف ورزی کا الزام لگایا ہے۔ ایسوسی ایٹڈ جرنل لمیٹڈ کو 1937 میں پنڈت جواہر لال نہرو نے قائم کیا تھا، جس نے تین اخبارات نکالنے شروع کئے تھے۔ ہندی میں نوجیون، اردو میں قومی آواز اور انگریزی میں نیشنل ہیرالڈ۔ سال 2008 تک ایسوسی ایٹڈ جرنل لمیٹڈ نے فیصلہ کیا کہ اب وہ اخبار نہیں شائع کرے گا۔

       

      یہ بھی پڑھئے : سدھو کے وفادار Ex - MLA کو کانگریس نے پارٹی سے نکالا، کی تھی پارٹی مخالف بیان بازی


      دی ایسوسی ایٹڈ جرنل لمیٹڈ پر 90 کروڑ روپے کا قرض تھا۔ 2010 میں مالیاتی چیلنجوں کا سامنا کر رہے اے جے ایل کی تحویل ینگ انڈین پرائیویٹ لمیٹڈ نام کی ایک نئی کمپنی نے لے لی تھی ۔ سمن دوبے اور سیم پیترودا وائی آئی ایل کے ڈائریکٹرس تھے ۔ الزام ہے کہ کانگریس نے 50 لاکھ کی سرمایہ کاری سے ینگ انڈین پرائیویٹ لمیٹڈ کے نام سے ایک غیر منافع بخش کمپنی بنائی، جس کی 76 فیصد حصہ راہل گاندھی اور ان کی والدہ سونیا گاندھی کے پاس تھی۔

      2012 میں بی جے پی لیڈر سبرامنیم سوامی نے عدالت میں مفاد عامہ کی عرضی دائر کی تھی۔ انہوں نے کانگریس پر نیشنل ہیرالڈ شائع کرنے والی کمپنی ایسوسی ایٹڈ جرنل لمیٹڈ کے حصول میں دھوکہ دہی کا الزام لگایا تھا ۔ سبرامنیم سوامی نے اپنی مفاد عامہ کی عرضی میں عدالت کو بتایا تھا کہ صرف 50 لاکھ روپے خرچ کرکے 90 کروڑ روپے کی وصولی ہوئی۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: