உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    پنجاب اسمبلی انتخابات کے لئے سدھو کی تیاری شروع، بتایا کیسے امیدواروں کو ملے گا ٹکٹ

    پنجاب اسمبلی انتخابات کے لئے سدھو کی تیاری شروع، بتایا کیسے امیدواروں کو ملے گا ٹکٹ

    پنجاب اسمبلی انتخابات کے لئے سدھو کی تیاری شروع، بتایا کیسے امیدواروں کو ملے گا ٹکٹ

    کانگریس کی پنجاب یونٹ (Punjab Congress) کے سربراہ نوجوت سنگھ سدھو (Navjot Singh Sidhu) نے منگل کو یہاں پارٹی کے ریاستی دفتر میں کام کاج سنبھال لیا اور کہا کہ ریاستی اسمبلی انتخابات (Punjab Elections 2022) میں میں امیدواروں کے سلیکشن کے لئے جیت کا امکان ہی واحد پیمانہ ہوگا

    • Share this:
      چندی گڑھ: کانگریس کی پنجاب یونٹ (Punjab Congress) کے سربراہ نوجوت سنگھ سدھو (Navjot Singh Sidhu) نے منگل کو یہاں پارٹی کے ریاستی دفتر میں کام کاج سنبھال لیا اور کہا کہ ریاستی اسمبلی انتخابات (Punjab Elections 2022) میں میں امیدواروں کے سلیکشن کے لئے جیت کا امکان ہی واحد پیمانہ ہوگا اور موجودہ رکن اسمبلی ہونا امیدواری کی گارنٹی نہیں ہے۔ اس سے پہلے نوجوت سنگھ سدھو نے شرط رکھی تھی کہ جس دن نئے سالیسٹر جنرل کی تقرری کی جائے گی اور نئے پولیس جنرل ڈائریکٹر (ڈی جی پی) کی تقرری کے لئے یونین پبلک سروس کمیشن سے پینل آئے گا، اس کے بعد ہی وہ کام کاج سنبھالیں گے۔ سدھو کے ساتھ کانگریس جنرل سکریٹری ہریش چودھری اور وزیر اعلیٰ چرنجیت سنگھ چنی (Chief Minister Charanjit Singh Channi) بھی تھے۔

      نوجوت سنگھ سدھو نے دے دیا تھا استعفیٰ

      نوجوت سنگھ سدھو نے اس سے پہلے ان عہدوں پر ہوئی تقرریوں پر اعتراض ظاہر کرتے ہوئے پنجاب کانگریس صدر عہدے سے استعفیٰ دے دیا تھا۔ پنجاب حکومت نے اس ماہ کے آغاز میں سالیسٹر جنرل اے پی ایس دیول کا استعفیٰ منظور کرلیا تھا۔ انہوں نے نامہ نگاروں سے کہا کہ ضلع کانگریس کمیٹی کے صدور کی فہرست جلد ہی جاری کی جائے گی۔ اس کے ساتھ ہی انہوں ںے کہا کہ پارٹی متحد ہے۔

       نوجوت سنگھ سدھو نے اس سے پہلے ان عہدوں پر ہوئی تقرریوں پر اعتراض ظاہر کرتے ہوئے پنجاب کانگریس صدر عہدے سے استعفیٰ دے دیا تھا۔

      نوجوت سنگھ سدھو نے اس سے پہلے ان عہدوں پر ہوئی تقرریوں پر اعتراض ظاہر کرتے ہوئے پنجاب کانگریس صدر عہدے سے استعفیٰ دے دیا تھا۔


      سدھو نے امیدواروں کی اہلیت بتائی

      نوجوت سنگھ سدھو نے مزید کہا کہ آئندہ اسمبلی انتخابات کے لئے امیدواروں کی جیتنے کا امکان ہی اہلیت ہوگی۔ انہوں نے کہا، ’ہم پیمانے سے کوئی سمجھوتہ نہیں کریں گے‘۔  انہوں نے کہا کہ اس بات کی گارنٹی نہیں ہوگی کہ ایک بار کوئی شخص رکن اسمبلی بن گیا تو الیکشن لڑنے کے لئے انہیں پھر سے ٹکٹ مل جائے گا۔

      یہ بھی پڑھیں۔

      پوجا بنرجی نے کنال ورما کے ساتھ گوا میں دوبارہ کی شادی، اس جوڑے کا ہے ایک بیٹا


      سروے کے بعد ہوگا امیدواروں کا فیصلہ

      پنجاب کانگریس صدر نے کہا، ’پارٹی فیصلہ کرے گی، سروے کرایا جائے گا، اعلیٰ کمان فیصلہ کرے گا۔ ہمارے پاس ایک بہت ہی اچھا جمہوری طرز عمل ہے، جو امیدواروں کے بارے میں فیصلہ کرے گی، لیکن پیمانہ اہلیت ہے‘۔ الیکشن کے لئے کسی پارٹی کے ساتھ اتحاد کے سوال پر کانگریس جنرل سکریٹری ہریش چودھری نے کہا کہ اس وقت اتحاد کے بارے میں کوئی بات چیت نہیں ہو رہی ہے۔ حالانکہ انہوں نے کہا کہ پارٹی مساوی نظریات والی پارٹیوں پر تبادلہ خیال کر سکتی ہے، جن کے پاس پنجاب اور پنجابیت کو آگے لے جانے کا نظریہ ہے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: