உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Maharashtra Political Crisis: ادھو ۔ پوار کی ملاقات میں شندے کو وزیر اعلی کا عہدہ دینے پر غور

    Maharashtra Political Crisis: ادھو ۔ پوار کی ملاقات میں شندے کو وزیر اعلی کا عہدہ دینے پر غور ۔ فائل فوٹو ۔

    Maharashtra Political Crisis: ادھو ۔ پوار کی ملاقات میں شندے کو وزیر اعلی کا عہدہ دینے پر غور ۔ فائل فوٹو ۔

    Maharashtra Political Crisis: مہاراشٹر میں موجودہ سیاسی بحران کے درمیان وزیر اعلی ادھو ٹھاکرے اور این سی پی سپریمو شرد پوار کے درمیان اہم ملاقات ختم ہو گئی ہے۔ دونوں کے درمیان تقریباً ایک گھنٹے تک بات چیت ہوئی۔

    • Share this:
      نئی دہلی: مہاراشٹر میں موجودہ سیاسی بحران کے درمیان وزیر اعلی ادھو ٹھاکرے اور این سی پی سپریمو شرد پوار کے درمیان اہم ملاقات ختم ہو گئی ہے۔ دونوں کے درمیان تقریباً ایک گھنٹے تک بات چیت ہوئی۔ اس میٹنگ میں این سی پی لیڈر سپریہ سولے، جتیندر اہواڈ اور جینت پاٹل بھی موجود تھے۔

      اس درمیان ذرائع سے پتہ چلا ہے کہ دونوں لیڈروں کے درمیان ملاقات میں باغی لیڈر ایکناتھ شندے کو ریاست کے وزیر اعلیٰ کا عہدہ دینے پر غور کیا گیا ۔ میٹنگ میں اس بات پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا کہ باغی لیڈر ایکناتھ شندے کو کیسے منایا جائے۔ اس سلسلہ میں اس بات پر بھی غور کیا گیا کہ کیا انہیں وزیراعلیٰ کا عہدہ دے کر اس بحران کو ختم کیا جاسکتا ہے۔ اس کے علاوہ کابینہ میں تبدیلیوں پر بھی بات چیت کی گئی ۔



       

      یہ بھی پڑھئے: سیاسی ہلچل کے درمیان وزیر اعلی ادھوٹھاکرے کا خطاب


      قابل ذکر ہے کہ مہاراشٹر میں ادھو ٹھاکرے کی سرکار کو لے کر تذبذب لگاتار برقرار ہے ۔ تیزی سے بدلتے حالات کے درمیان ریاست کے وزیر اعلی ادھوٹھاکرے نے بدھ کو خطاب کیا ۔ اس دوران انہوں نے کہا کہ شیوسینا اور ہندتوا میں کوئی فرق نہیں ہے ۔ ہم نے بالا صاحب کے اصولوں کو نہیں چھوڑا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ شیو سینا ہندتوا کے بغییر نہیں ہوسکتی ہے ۔ بالا صاحب کی شیوسینا اور آج کی شیوسینا میں کیا فرق ہے ۔ مشکل حالات میں ہم نے 2019 کا الیکشن لڑا تھا ۔ میں نے اپنی پوری ذمہ داری نبھائی ۔ ہندتوا کے بارے میں اسمبلی میں بات کی تھی ۔ ہم تو بالا صاحب کے نظریہ کو آگے لے جارہے ہیں ۔ یہ بالا صاحب والی ہی شیوسینا ہے ۔

       

      یہ بھی پڑھئے: سنجے راوت کا دعویٰ- ایکناتھ شندے سے ایک گھنٹے ہوئی بات چیت


      ادھو ٹھاکرے نے کہا کہ اگر انہیں وزیر اعلی بننا تھا تو میرے سامنے کہتے کہ مجھے وزیر اعلی بننا ہے ، اس کیلئے سورت جانے کی کیا ضرورت ہے ۔ میرے سامنے کہتے تو استعفی دیدیتا۔ شیوسینا سے غداری ٹھیک نہیں ہے ۔ جو ممبر اسمبلی چاہتے ہیں کہ میں استعفی دیدوں، وہ آئیں اور مجھ سے کہیں، میں استعفی دیدوں گا ۔ اگر آپ چاہتے ہیں کہ میں وزیر اعلی نہ رہوں تو ٹھیک ہے ۔ ممبران اسمبلی مجھ سے کہیں گے تو میں استعفی دیدوں گا ۔

      مہاراشٹر کے وزیر اعلی ٹھاکرے نے کہا کہ میں شیوسینا کے صدر کا عہدہ چھوڑنے کیلئے بھی تیار ہوں ، میں کسی چیلنج سے پیچھے ہٹنے والا نہیں ہوں، جو ممبران اسمبلی چاہتے ہیں وہ میرے سامنے آئیں ۔ انہوں نے کہا کہ جو ممبران اسمبلی چاہتے ہیں وہ میرے سامنے آئیں، میں فورا استعفی دیدوں گا ، لیکن اس کیلئے انہیں باہر جانے کی ضرورت نہیں ۔ وہ میرے سامنے آئیں ۔ کوئی بھی شیوسینک اگر وزیر اعلی بنے گا تو مجھے خوشی ہوگی ، لیکن میرے ساتھ کوئی غداری نہ کریں ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: