ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

لیٹر بم: انل دیشمکھ نے کی وزیر اعلیٰ ادھو ٹھاکرے سے بات، این سی پی نے کہا- نہیں دیں گے استعفیٰ

نیشنلسٹ کانگریس پارٹی (این سی پی) کے صدر جینت پاٹل نے کہا ہے کہ مہاراشٹرکے وزیر داخلہ انل دیشمکھ (Anil Deshmukh) استعفیٰ نہیں دیں گے۔ انہوں نے کہا ہے کہ کسی کو خوش کرنے کے لئے ممبئی کے سابق پولیس کمشنر پرم بیر سنگھ نے خط لکھا ہے۔

  • Share this:
لیٹر بم: انل دیشمکھ نے کی وزیر اعلیٰ ادھو ٹھاکرے سے بات، این سی پی نے کہا- نہیں دیں گے استعفیٰ
انل دیشمکھ نےکی وزیر اعلیٰ ادھو ٹھاکرے سے بات، این سی پی نےکہا- نہیں دیں گے استعفیٰ

ممبئی: نیشنلسٹ کانگریس پارٹی (این سی پی) کے صدر جینت پاٹل نے کہا ہے کہ مہاراشٹرکے وزیر داخلہ انل دیشمکھ (Anil Deshmukh) استعفیٰ نہیں دیں گے۔ انہوں نے کہا ہے کہ کسی کو خوش کرنے کے لئے ممبئی کے سابق پولیس کمشنر پرم بیر سنگھ نے خط لکھا ہے۔ پاٹل نے یہ بھی کہا ہے کہ سچن واجے کو شیو سینا سے جوڑنا غلط ہوگا۔ واضح رہے کہ پرم بیر سنگھ (Parambir Singh Letter News) نے انل دیشمکھ پر بڑا الزام لگایا ہے۔ انہوں نے مہاراشٹر کے گورنر بھگت سنگھ کوشیاری اور وزیر اعلیٰ ادھو ٹھاکرے کو خط میں لکھا ہےکہ سچن واجے نے انہیں بتایا تھا کہ انل دیشمکھ نے ان سے ہر ماہ 100 کروڑ روپئے وصول کرنے کو کہا تھا۔ مشرقی پولیس کمشنر کے اس بیان کے بعد ریاست کی سیاست گرما گئی ہے۔


اس درمیان پرم بیر سنگھ کے خط کے بعد این سی پی صدر شرد پوار سے مہاراشٹر کے وزیر داخلہ انل دیشمکھ نے فون پر بات چیت کی ہے۔ کہا جا رہا ہے کہ دونوں کے درمیان لمبی بات چیت ہوئی اور اس دوران دیشمکھ نے شرد پوار کے سامنے اپنا موقف رکھا۔ انل دیشمکھ نے وزیراعلیٰ ادھو ٹھاکرے سے بھی بات کی ہے اور ان کے سامنے بھی اپنا موقف رکھا ہے، ساتھ ہی اس معاملے میں جانچ کرنے کے لئے گزارش کی ہے۔


استعفیٰ دیں انل دیشمکھ


اس درمیان بی جے پی لیڈر رام کدم نے سوال اٹھایا ہےکہ آخر کیوں سچن واجے اپنی گاڑی میں کیش کاونٹنگ مشین لے کر گھومتا تھا۔ انہوں نےکہا، ’وزیر داخلہ کو نارکو ٹسٹ کراتے ہوئے فوراً استعفیٰ دینا چاہئے اور جب تک وہ ایسا نہیں کرتے، تب وہ ایسا نہیں کرتے، تب تک ہماری مخالفت جاری رہے گی۔ ہم کسی کا کوئی احسان نہیں لے رہے ہیں، لیکن پرم بیر سنگھ نے جو انکشاف کیا ہے، اس کی جانچ ہونی ہی چاہئے۔ اگر پرم بیر سنگھ کو واجے کے ایسا کرنے کو جانکاری تھی تو ان سے بھی پوچھ گچھ ہونی چاہئے۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Mar 21, 2021 11:16 AM IST