உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    پاکستان نے ہندوستانی دفاعی اداروں کی جانکاری کیلئے گجراتی ماہی گیروں کے SIM کارڈ کا کیا استعمال

    پاکستان نے ہندوستانی دفاعی اداروں کی جانکاری کیلئے گجراتی ماہی گیروں کے SIM کارڈ کا کیا استعمال

    پاکستان نے ہندوستانی دفاعی اداروں کی جانکاری کیلئے گجراتی ماہی گیروں کے SIM کارڈ کا کیا استعمال

    این آئی اے نے کہا کہ پاکستان نے ہندوستان کے دفاعی اداروں کی جانکاری حاصل کرنے کیلئے گجرات کے ان ماہی گیروں کے سم کارڈز کا استعمال کیا جنہیں سال 2020 میں پاکستان کی سمندری سیکورٹی ایجنسی نے گرفتار کیا تھا ۔

    • Share this:
      نئی دہلی : قومی جانچ ایجنسی (این آئی اے) نے ہندوستان کے خلاف پاکستان کی سازش کا پردہ فاش کیا ہے۔ این آئی اے نے کہا کہ پاکستان نے ہندوستان کے دفاعی اداروں کی جانکاری حاصل کرنے کیلئے گجرات کے ان ماہی گیروں کے سم کارڈز کا استعمال کیا جنہیں سال 2020 میں پاکستان کی سمندری سیکورٹی ایجنسی نے گرفتار کیا تھا ۔ ماہی گیروں کو اس وقت گرفتار کیا گیا تھا ، جب وہ سمندر میں مچھلیاں پکڑ رہے تھے ۔

      آندھرا پردیش کے جاسوسی کیس میں حیدرآباد کی ایک خصوصی عدالت میں داخل کی گئی این آئی اے کی چارج شیٹ میں الزام لگایا گیا ہے کہ گجرات سے تعلق رکھنے والے 27 سالہ الطاف حسین گنچی بھائی عرف شکیل اور ایک پاکستانی شہری وسیم نے ہندوستان کے خلاف جنگ چھیڑنے کے ارادے سے سازش رچی اور جاسوسی کی سرگرمیوں میں ملوث رہے۔

       

      یہ بھی پڑھئے  : J&K News : وزیر اعظم مودی کی ریلی کی جگہ سے صرف 12 کلومیٹر دور کھیتوں میں دھماکہ


      یہ کیس اصل میں آندھرا پردیش کے وجئے واڑہ ضلع کے کاؤنٹر انٹیلی جنس سیل پولیس اسٹیشن میں گزشتہ سال 10 جنوری کو درج کیا گیا تھا۔ این آئی اے نے گزشتہ سال 23 دسمبر کو کیس دوبارہ درج کیا تھا۔ ہندوستانی مسلح افواج کے اہلکاروں سے دفاعی اداروں سے متعلق اہم اور حساس معلومات حاصل کرنے کیلئے انٹرنیٹ میڈیا پلیٹ فارمز جیسے فیس بک، واٹس ایپ، انسٹاگرام کا استعمال کیا گیا۔

       

      یہ بھی پڑھئے : ملک میں کورونا بحران پر وزرائے اعلی کے ساتھ بدھ کو میٹنگ کریں گے پی ایم مودی


      جانچ سے یہ بات پتہ چلی ہے کہ گنچی بھائی نے ہندوستانی دفاعی افواج اور تنصیبات سے متعلق حساس معلومات کیلئے پاکستان میں اپنے ہینڈلرز کو ہندوستانی سم نمبروں پر موصول ہونے والے او ٹی پی دے کر وہاٹس ایپ کو ایکٹویٹ کیا ۔ چارج شیٹ کے مطابق یہ سم کارڈ گجرات سے ہندوستانی ماہی گیروں کے نام پر لئے گئے تھے۔

      تحقیقات سے معلوم ہوا کہ یہ سم کارڈ گنچی بھائی کوغیر قانونی طریقہ پر واپس ہندوستان بھیج دئے گئے تھے ، جنہوں نے پاکستان میں اپنے آقاؤں کی ہدایت پر ایسے سات سم کارڈز ایکٹیویٹ کیے تھے۔ گنچی بھائی کو اس معاملہ میں گزشتہ سال 25 اکتوبر کو گرفتار کیا گیا تھا۔ چارج شیٹ میں کہا گیا ہے کہ وسیم نے ہندوستانی دفاعی تنصیبات سے متعلق حساس معلومات حاصل کرنے کے لیے ہندوستانی ایجنٹوں کو آن لائن کرپٹو کرنسی ایکسچینج پلیٹ فارم کے ذریعہ سے خفیہ طور پر رقم بھیجی ۔ وہ فی الحال مفرور ہے۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: