ہوم » نیوز » وطن نامہ

دہلی : پاکستانی سفارت خانے سے رچی جاتی ہے یہ ناپاک سازش، این آئی اے نے کیا انکشاف

ٹیررفنڈنگ کیس میں قومی تحقیقاتی ایجنسی یعنی این آئی اے کی تحقیقات میں کچھ ایسے انکشافات سامنے آئے ہیں جن سے اس بات کی تصدیق ہوتی ہے کہ دہلی میں موجود پاکستان کا سفارت خانہ بھی کشمیرمیں تشدداورپتھراؤ کی وارداتوں میں ملوث رہاہے۔

  • Share this:
دہلی : پاکستانی سفارت خانے سے رچی جاتی ہے یہ ناپاک سازش، این آئی اے نے کیا انکشاف
دہلی میں موجود پاکستانی سفارت خانہ۔(تصویر:پی ٹی آئی)۔

ٹیررفنڈنگ کیس میں قومی تحقیقاتی ایجنسی یعنی این آئی اے کی تحقیقات میں کچھ ایسے انکشافات سامنے آئے ہیں جن سے اس بات کی تصدیق ہوتی ہے کہ دہلی میں موجود پاکستان کا سفارت خانہ بھی کشمیرمیں تشدداورپتھراؤ کی وارداتوں میں ملوث رہاہے۔ این آئی اے نے جمعہ کے روز قومی دارالحکومت دہلی کی ایک عدالت میں ضمنی چارج شیٹ داخل کی ہے۔ چارج شیٹ کے مطابق ، پاکستان کے سفارت خانے نے علیحدگی پسندوں کو وادی میں تشدد ، پتھراؤ اوردہشت گردی کی سرگرمیوں کے لئے مالی اعانت بھی فراہم کی ہے۔


اس سے پہلے ٹیرر فنڈنگ کیس میں پہلی چارج شیٹ سال 2017 میں داخل کی گئی تھی۔وادی میں دہشت گردی اور دہشت گردی کی دیگر سرگرمیوں کے لئے پاکستان کے سفارت خانے سے مالی اعانت کیے جانے کے ثبوت ملے ہیں۔اس چارج شیٹ میں دہشت گردی کے پورے سنڈیکیٹ کا ذکرکیاگیاہے۔ چارج شیٹ میں یہ بھی بتایا گیا ہے کہ دہشت گردی کی کارروائیوں ، پتھراؤاوردیگرپرتشدد کارروائیوں کے لئے دہلی سے کس طرح سرحد پاراوروادی کشمیر سے رقومات بھیجی جاتی تھی۔

ذرائع کے مطابق، چارج شیٹ میں این آئی اے ایسی کئی تفصیلات عدالت کے سامنے رکھی جس سے یہ ثابت کیاجاسکتاہے کہ پاکستانی سفارت خانے کی جانب سے ٹیرر فنڈنگ کی گئی ہے۔ این آئی اے کے مطابق علیحدگی پسند لیڈر اورملزم یاسین ملک کے گھر سے ایک ڈیجیٹل ڈائری ملی تھی، جس میں دہشت گرد حافظ سعید کی تنظیم سے رقومات کے لین دین کی تفصیلات درج تھیں۔ اس کے علاوہ یاسین ملک کے ای میل یعنی ہاٹ میل آئی ڈی سے بھی بہت ساری ای میلزموصول ہوئی ہیں جس سے صاف ظاہرہوتاہے کہ یاسین ملک لشکراورتحریک المجاہدین کے ساتھ رابطے میں تھے۔


اس کے علاوہ ٹیرر فنڈنگ کی کیس میں این آئی اے نے راشد انجینئراورمسرت عالم کے مکانات پر چھاپے ماری کرتے ہوئے ثبوت جمع کیے ہیں۔ پاکستان کی مالی اعانت کے سہارے وادی میں پتھراؤ، آتش زنی اورتشدد پھیلانے کا کام ہواکرتاتھا۔ اس معاملے میں ملزم یاسین ملک اوردیگرکو گرفتارکیاگیا تھا اور وہ ایک طویل عرصے سےجیل میں بند ہے
First published: Oct 04, 2019 06:41 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading