لوک سبھا الیکشن سے قبل اکھلیش یادوکوبڑاجھٹکا، عظیم اتحاد سےالگ ہوگئی یہ پارٹی

نشاد پارٹی کے صدرسنجے نشاد نے اترپردیش کے وزیراعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ سے ملاقات کی۔ قیاس آرائی کی جارہی ہے کہ نشاد پارٹی اس بارلوک سبھا الیکشن میں بی جے پی سے اتحاد کرسکتی ہے۔

Mar 30, 2019 01:25 PM IST | Updated on: Mar 30, 2019 01:25 PM IST
لوک سبھا الیکشن سے قبل اکھلیش یادوکوبڑاجھٹکا، عظیم اتحاد سےالگ ہوگئی یہ پارٹی

اکھلیش یادو: فائل فوٹو

لوک سبھا الیکشن 2019 سے پہلے اترپردیش میں سماجوادی پارٹی - بہوجن سماج پارٹی (ایس پی - بی ایس پی اتحاد) کو بڑا جھٹکا لگا ہے۔ 26 مارچ کو اکھلیش یادو کی سماجوادی پارٹی کے ساتھ اتحاد کا اعلان کرنے والی نشاد پارٹی نے عظیم اتحاد سے الگ ہونے کا اعلان کردیا ہے۔ نشاد پارٹی کا سماجوادی  پارٹی سے کنارہ کشی کرنے کو عظیم اتحاد کے لئے پروانچل میں بڑا جھٹکا مانا جارہا ہے۔

نشاد پارٹی کے صدرسنجے نشاد نے کہا ہے کہ ہم عظیم اتحاد سے الگ ہورہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں اورہماری پارٹی کے کارکنان کو سماجوادی پارٹی میں احترام نہیں مل رہا تھا۔ کارکنان اسے لے کرمایوس تھے۔ اب پارٹی الگ سے الیکشن لڑنے کےساتھ دوسرے متبادل پربھی غورکررہی ہے۔

Loading...

سنجے نشاد نے کہا 'اکھلیش یادو نے کہا تھا کہ وہ ہماری پارٹی کے لئے سیٹوں کا اعلان کریں گے۔ لیکن انہوں نے پوسٹریا لیٹرمیں کہیں پربھی ہمارا نام نہیں لکھا۔ میری پارٹی کے کارکنان، عہدیداران، کورکمیٹی اس سے مایوس تھی، اس لئے نشاد پارٹی نے آج فیصلہ لیا ہے کہ ہم 'اتحاد' کے ساتھ نہیں ہیں، ہم آزاد ہیں، آزادانہ طورپرالیکشن لڑ سکتے ہیں اوردیگر متبادل کی بھی تلاش کرسکتے ہیں۔ پارٹی اب آزاد ہے'۔

نشاد پارٹی کے صدرسنجے نشاد نے اترپردیش کے وزیراعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ سے ملاقات کی۔ قیاس آرائی کی جارہی ہے کہ نشاد پارٹی اس بارلوک سبھا الیکشن میں بی جے پی سے اتحاد کرسکتی ہے۔ وہیں گورکھپورسے موجودہ سماجوادی رکن پارلیمنٹ پروین نشاد اس بار بی جے پی کے امیدوارہوسکتےہیں۔

Loading...