ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

نتیش کمار نے والد کی بے عزتی کی ، 2019 کے انتخابات میں بھی دیا تھا "دھوکہ" : چراغ پاسوان

چراغ پاسوان Chirag Paswan) نے الزام لگایا کہ وزیر اعلی نتیش کمار (CM Nitish Kumar) نے آنجہانی لیڈر رام ولاس پاسوان کے ساتھ اس وقت غلط رویہ اختیار کیا تھا جب ان کے والد نے نتیش کمار سے راجیہ سبھا کیلئے کاغذات نامزدگی داخل کرنے کیلئے ساتھ جانے کی درخواست کی تھی ۔

  • Share this:
نتیش کمار نے والد کی بے عزتی کی ، 2019 کے انتخابات میں بھی دیا تھا
نتیش کمار نے والد کی بے عزتی کی ، 2019 کے انتخابات میں بھی دیا تھا دھوکہ : چراغ پاسوان

جے ڈی یو سے الگ ہونے کے فیصلہ پر چراغ پاسوان نے جمعرات کو وضاحت پیش کی کہ بہار میں اسمبلی انتخابات کیلئے سیٹوں کی تقسیم کا وزیر اعلی نتیش کمار کی پارٹی جے ڈی یو سے الگ ہونے میں کوئی تعلق نہیں ہے ۔ چراغ پاسوان نے کہا کہ ان کی پارٹی کی ہمیشہ سے مخالفت کی جاتی تھی ۔ چراغ پاسوان نے کہا کہ ان کی پارٹی نے گزشتہ سال اتحاد میں لوک سبھا الیکشن لڑا تھا ، کیونکہ یہ ان کی این ڈی اے میں واپسی کی محض مجبوری تھی ۔ نتیش کمار پر الزام لگاتے ہوئے انہوں نے کہا کہ لوک سبھا انتخابات کے دوران نتیش کمار کی پارٹی نے ایل جے پی کے امیدواروں کے خلاف کام کیا تھا ۔


بتادیں کہ حال ہی میں رام ولاس پاسوان کا انتقال ہوا ہے ۔ پی ٹی آئی کو دئے ایک انٹرویو میں 37 سالہ چراغ پاسوان نے الزام لگایا کہ وزیر اعلی نتیش کمار نے ایل جے پی کے بانی آنجہانی رام ولاس پاسوان کے ساتھ غلط رویہ اختیار کیا جب گزشتہ سال انہوں نے جے ڈی یو سربراہ سے ملاقات کی تھی اور راجیہ سبھا کیلئے کاغذات نامزدگی داخل کرنے کیلئے ان کا ساتھ دینے کی درخواست کی تھی ۔


چراغ پاسوان نے کہا کہ نتیش کمار نے حال ہی میں مزاحیہ تبصرہ کیا تھا کہ میرے والد جے ڈی یو کی حمایت کے بغیر راجیہ سبھا کیلئے منتخب نہیں ہوسکتے تھے ، کیونکہ ہمارے پاس صرف دو ممبران اسمبلی تھے ۔ انہیں یاد رکھنا چاہئے کہ میرے والد کو اس وقت بی جے پی کے صدر امت شاہ نے راجیہ سبھا سیٹ کا وعدہ کیا تھا ۔


چراغ پاسوان کا کہنا ہے کہ مجھے بہت برا لگا جب نتیش کمار نے اس وقت غلط رویہ اختیار کیا جب میرے والد نے ان سے کاغذات نامزدگی داخل کرنے کیلئے ساتھ جانے کی درخواست کی ۔ نتیش کمار شبھ مہورت ختم ہونے کے بعد ہی آئے تھے ۔ کوئی بھی بیٹا اپنے والد کے ساتھ ایسا رویہ برداشت نہیں کرسکتا ۔



چراغ پاسوان نے کہا کہ انہوں نے جے ڈی یو کے خلاف بغاوت نہیں کی ہے بلکہ پارٹی نے اتحاد کے ساتھیوں کو مناسب حصہ دینے سے انکار کردیا تھا ۔ چراغ نے کہا کہ میری مرکزی وزیر امت شاہ اور بی جے پی صدر جے پی نڈا سے حالیہ دنوں میں ملاقات ہوئی تھی ، لیکن ایک مرتبہ بھی سیٹوں کی تقسیم کا معاملہ نہیں اٹھا ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Oct 15, 2020 06:03 PM IST