உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    سائبرملزمین کی اب نہیں ہے خیر، جھارکھنڈ پولیس اب ملزمین کے ناپاک منصوبوں کو کرے گی ختم

    سائبرملزمین کی اب نہیں ہے خیر، جھارکھنڈ پولیس اب ملزمین کے ناپاک منصوبوں کو کرے گی ختم

    سائبرملزمین کی اب نہیں ہے خیر، جھارکھنڈ پولیس اب ملزمین کے ناپاک منصوبوں کو کرے گی ختم

    جھارکھنڈ پولیس نے ایک ڈاٹا بیس تیارکیا ہے، جس کے تحت اب تک کئی سائبر ملزمین کو رڈار پر لیا گیا ہے اور ان کے ذریعہ بنائے گئے تقریباً ایک سو کروڑ کے املاک سے متعلق جانکاری بھی یکجا کی گئی ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Share this:
    رانچی: کوسوں دور بیٹھے اپنی انگلیوں کےکرامات سے لوگوں کے گاڑھی کمائی پر ہاتھ صاف کرنے والے سائبر ملزمین کی اب خیر نہیں ہے۔ جھارکھنڈ پولیس اب نہ صرف سائبر ملزمین کے ناپاک منصوبوں کو ناکام کرے گی بلکہ سائبر کرائم سے بنائے گئے املاک کو بھی ضبط کرے گی۔ یعنی سائبرملزمین پر پولیس اور ای ڈی کا ڈنڈا ایک ساتھ چلےگا۔ جھارکھنڈ پولیس نے ایک ڈاٹا بیس تیارکیا ہے، جس کے تحت اب تک کئی سائبر ملزمین کو رڈار پر لیا گیا ہے اور ان کے ذریعہ بنائے گئے تقریباً ایک سو کروڑ کے املاک سے متعلق جانکاری بھی یکجا کی گئی ہے۔ اس کے ساتھ ہی اب ان املاک کی جانکاری شیئرکرنے کا عمل شروع ہوا ہے تاکہ ان سائبر فراڈ پر شکنجہ کسا جا سکے۔

    جھارکھنڈ پولیس نے ایک ڈاٹا بیس تیارکیا ہے، جس کے تحت اب تک کئی سائبر ملزمین کو رڈار پر لیا گیا ہے اور ان کے ذریعہ بنائے گئے تقریباً ایک سو کروڑ کے املاک سے متعلق جانکاری بھی یکجا کی گئی ہے۔
    جھارکھنڈ پولیس نے ایک ڈاٹا بیس تیارکیا ہے، جس کے تحت اب تک کئی سائبر ملزمین کو رڈار پر لیا گیا ہے اور ان کے ذریعہ بنائے گئے تقریباً ایک سو کروڑ کے املاک سے متعلق جانکاری بھی یکجا کی گئی ہے۔


    سائبر کرائم کے تعلق سے تجزیہ میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ سائبر ملزمین ان دنوں مغربی بنگال کے سم کا استعمال کر کے لوگوں کی گاڑھی کمائی کو ان کے بینک اکاؤنٹ سے اڑانے میں لگے ہیں۔ وہیں ریاست کے جامتاڑا کے علاوہ دیوگھر اور گریڈیہ میں بھی ان دنوں سائبر ملزمین کی بڑی پہنچ ہے، جس کے پیش نظر پولیس اور سائبر سیل پوری طرح نئی حکمت عملی کے ساتھ سرگرم ہے۔

    محکمہ ای ڈی کو ان املاک کو دی جائے گی تفصیل

    رانچی پولیس بھی اس معاملہ پر سنجیدہ ہے اور کلسڑر بنا کر ان ملزمین پر کاروائی میں مصروف ہے ۔ بہرحال سائبر کرائم پر لگام لگانے کے مقصد سے مسلسل حکمت عملی تو تیار کی جاتی ہے لیکن ضرورت ہے لوگوں کو بیدار ہونے کی تاکہ سائبر فراڈ کے ناپاک منصوبوں پر پانی پھیرا جا سکے۔
    Published by:Nisar Ahmad
    First published: