உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Twin Towers Demolition: پولیس فورس کی تعیناتی، ہیلپ لائن نمبر اور کنٹرول روم، جانیں ٹوئن ٹاور گرانے سے پہلے کی تیاری

    ٹوئن ٹاور کے انہدام سے قبل پولیس نے کی بڑی تیاری

    ٹوئن ٹاور کے انہدام سے قبل پولیس نے کی بڑی تیاری

    Twin Towers Demolition Noida News: نوئیڈا میں سپر ٹیک کے ٹوئن ٹاورس کا انہدامی عمل اب آخری مرحلے میں ہے۔ ٹوئن ٹاورس انہدام سے متعلق تیاری مکمل ہوچکی ہے۔ کسی بھی ایمرجنسی صورتحال سے نمٹنے کے لئے انتظامیہ نے پوری تیاری کرلی ہے۔ یہاں نہ صرف پولیس فورس کی بڑی تعداد میں تعیناتی ہوگی، بلکہ نوئیڈا اتھارٹی کنٹرول روم کے ذریعہ اس انہدامی مہم پر اپنی نظر بنائے رکھے گا۔ اتنا ہی نہیں، نوئیڈا اتھارٹی نے شکایتوں کے لئے ہیلپ لائن نمبر بھی جاری کئے ہیں۔ 

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Delhi, India
    • Share this:
      نوئیڈا: نوئیڈا میں سپرٹیک کے ٹوئن ٹاورس کو گرانے کا عمل اب آخری مرحلے میں ہے۔ ٹوئن ٹاورس انہدام کو لے کر پوری تیاری ہو چکی ہے۔ کسی بھی ایمرجنسی صورتحال سے نمٹنے کے لئے انتظامیہ نے کمر کس لی ہے۔ یہاں نہ صرف پولیس فورس کی بھاری تعداد میں تعیناتی ہوگی، بلکہ نوئیڈا اتھارٹی کنٹرول روم کے ذریعہ سے اس انہدامی مہم پر اپنی نظر بنائے رکھے گا۔  اتنا ہی نہیں، نوئیڈا اتھارٹی نے شکایتوں کے لئے ہیلپ لائن نمبر بھی جاری کئے ہیں۔

      ٹوئن ٹاور بلاسٹ کو لے کر نوئیڈا اتھارٹی نے ایک کنٹرول روم کا بھی قیام کیا ہے، جو عمارت انہدام کے بعد کسی بھی ایمرجنسی صورتحال سے نمٹنے کے لئے ہے۔ یہ کنٹرول رول شکایت درج کرکے کارروائی کرے گا۔ کنٹرول روم 28 اگست کی صبح 6:00 بجے سرگرم ہو جائے گا اور 30 اگست تک 24 گھنٹے کام کرے گا۔ اتنا ہی نہیں، اتھارٹی نے شکایت درج کرانے کے لئے ہیلپ لائن نمبر بھی جاری کیا ہے۔ 0120-2425301, 0120-2425302, 0120-2425025 11- ان نمبر پر اطلاع یا شکایت درج کی جاسکتی ہے۔ عمارت کے آس پاس تعینات لوگوں کے لئے این-95 ماسک اور کیپ فراہم کئے جائیں گے۔ متاثرہ علاقوں میں اشخاص کے داخلے اور آمدورفت شام 5 بجے کے بعد ہی ممکن ہو پائے گا۔

      سپر ٹیک کے ٹوئن ٹاورس کے انہدام پر ڈی سی پی سینٹرل راجیش ایس نے کہا کہ 400 سے زیادہ سول پولیس اہلکار موقع پر موجود رہیں گے۔ این ڈی آر ایف سے بھی گزارش کی گئی ہے۔ اس کے علاوہ، 8 ایمبولینس، 4 فائر ٹینڈر اسپاٹ پر رہیں گے۔ ساتھ ہی تین اسپتالوں میں ایمرجنسی صورتحال کے لئے بیڈ ریزرو رہیں گے۔ اتنا ہی نہیں، اگر ضرورت پڑی تو گرین کاریڈور بھی بنایا جائے گا۔



      انہوں نے مزید کہا کہ نقل وحمل صورتحال کو سنبھالنے کے لئے ٹریفک پولیس اہلکاروں کو تعینات کیا جائے گا۔ باشندوں کو اتوار کو صبح 7 بجے تک ڈیڈلائن پر عمل کرنے اور گھروں کو خالی کرنے کے لئے کہا گیا ہے۔ سیکورٹی کے لئے سوسائٹی میں محدود تعداد میں گارڈ کی اجازت دی جائے گی۔ سیکورٹی گارڈ بھی اتوار کو 2.30 بجے ہونے والے دھماکہ سے پہلے 1.45 بجے چلے جائیں گے۔ اتنا ہی نہیں، ایکسپریس وے کو کم از کم تقریباً ایک گھنٹے کے لئے 2 بجے سے 3 بجے کے درمیان بند کیا جائے گا۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: