ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

بڑی خبر: راجیہ سبھا الیکشن کے لئے آزاد امیدوار کی پرچہ نامزدگی منسوخ، سشیل مودی بلا مقابلہ منتخب

راجیہ سبھا کی ایک سیٹ کے ضمنی انتخاب کیلئے سشیل کمار مودی (Sushil Kumar Modi) کے علاوہ ایک واحد آزاد امیدوار شیام نندن پرساد (Shyam Nandan Prasad) نے پرچہ داخل کیا تھا۔ آج نامزد پرچوں کی جانچ کی گئی، جس میں نریندر مودی کا پرچہ درست پایا گیا، لیکن شیام نندن  پرساد کے پرچے میں تجویز کنندوں (10 اراکین اسمبلی) کانام نہیں ہونے کی وجہ سے ان کی امیدواری خارج کر دی گئی۔

  • Share this:
بڑی خبر: راجیہ سبھا الیکشن کے لئے آزاد امیدوار کی پرچہ نامزدگی منسوخ، سشیل مودی بلا مقابلہ منتخب
بڑی خبر: راجیہ سبھا الیکشن کے لئے آزاد امیدوار کی پرچہ نامزدگی منسوخ، سشیل مودی بلا مقابلہ منتخب

پٹنہ: بہار کے سابق نائب وزیراعلیٰ اورقومی جمہوری اتحاد (این ڈی اے) کے امیدوار سشیل کمار مودی راجیہ سبھا کیلئے بلامقابلہ منتخب کر لئے گئے ہیں۔ راجیہ سبھا کی ایک سیٹ کے ضمنی انتخاب کیلئے سشیل مودی کے علاوہ ایک واحد آزاد امیدوار شیام نندن پرساد نے پرچہ داخل کیا تھا۔ آج نامزد پرچوں کی جانچ کی گئی، جس میں نریندر مودی کا پرچہ درست پایا گیا، لیکن شیام نندن  پرساد کے پرچے میں تجویز کنندوں (10 اراکین اسمبلی) کانام نہیں ہونے کی وجہ سے ان کی امیدواری خارج کر دی گئی۔ اس طرح سشیل مودی کے خلاف کوئی بھی امیدوار نہیں ہونے کی وجہ سے وہ بلا مقابلہ انتخاب جیت گئے۔

غور طلب ہے کہ راجیہ سبھا کی اس سیٹ کے ضمنی انتخاب کیلئے نوٹیفکیشن 26 نومبر کو جاری ہوئی تھی اور امیدواروں کے پرچہ نامزدگی کی آخری تاریخ تین دسمبر تھی۔ 4 دسمبر کو نامزد پرچوں کی جانچ اور پانچ دسمبر کو نام واپس لینے کی تاریخ مقرر کی گئی ہے۔ اس کے بعد ہی سشیل کمار مودی کی جیت کا رسمی اعلان ہوگا۔ دراصل 06 دسمبر اتوار ہے اور اس وجہ سے سرکاری دفاتر میں ہفتہ واری چھٹی ہونے کی وجہ سے سشیل مودی کو جیت کا سرٹیفکٹ 7 دسمبر کو ملے گا۔


سشیل کمار مودی کی جیت کا رسمی اعلان سات دسمبر کو ہوگا۔حالانکہ وہ راجیہ سبھا رکن منتخب ہوگئے ہیں۔
سشیل کمار مودی کی جیت کا رسمی اعلان سات دسمبر کو ہوگا۔حالانکہ وہ راجیہ سبھا رکن منتخب ہوگئے ہیں۔


حالانکہ ایسا نہیں ہے کہ عظیم اتحاد کی طرف سے کوئی کوشش نہیں کی گئی۔ دراصل مخالف اتحاد چاہتا تھا کہ لوک جن شکتی پارٹی کی طرف سے آنجہانی رام ولاس پاسوان کی بیوی رینا پاسوان کو امیدوار بنایا جائے، لیکن چراغ پاسوان نے یہ واضح کردیا تھا کہ ایل جے پی کوئی امیدوار نہیں اتارے گا۔ اس کے بعد آرجے ڈی کی طرف سے دلت لیڈر شیام رجک کو اتارنے کی قواعد کی گئی۔ حالانکہ ذرائع بتاتے ہیں کہ ان کی طرف سے حتمی رضامندی نہیں ملی، جس کے بعد آر جے ڈی نے امیدوار کھڑا کرنے کی قواعد ہی چھوڑ دی۔ موصولہ اطلاعات کے مطابق شیام رجک نے ممکنہ شکست کو دیکھتے ہوئے ہی اس الیکشن میں حصہ لینے سے انکار کردیا تھا۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Dec 04, 2020 08:54 PM IST