ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

نیٹ - جے ای ای کے بہانے غیر این ڈی اے حکومت متحد، سپریم کورٹ کا دروازہ کھٹکھٹانے کو تیار

کانگریس صدر سونیا گاندھی کے ساتھ ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعہ غیر بی جے پی اقتدار والی ریاستوں کے وزرائے اعلیٰ کی میٹنگ ہوئی، جس میں نیٹ - جے ای ای امتحانات کے معاملےکو سپریم کورٹ میں چیلنج کرنے پر غور و خوض کیا گیا۔

  • Share this:
نیٹ - جے ای ای کے بہانے غیر این ڈی اے حکومت متحد، سپریم کورٹ کا دروازہ کھٹکھٹانے کو تیار
جے ای ای - نیٹ امتحانات کے مسئلے پر7 ریاستوں کے سپریم کورٹ جانے کا امکان

نئی دہلی: غیر بی جے پی اقتدار والی سات ریاستوں نے بدھ کے روز کہا کہ اگر مرکز نے میڈیکل اور انجینیئرنگ میں داخلہ کے لئے ہونے والی نیٹ اور جے ای ای امتحانات کے انعقاد کو ملتوی نہیں کیا گیا تو مرکز کے اس فیصلے کو سپریم کورٹ میں چیلنج کیا جائے گا۔ کانگریس کی صدر سونیا گاندھی کے ساتھ ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعے غیر بی جے پی اقتدار والی ریاستوں کے وزرائے اعلیٰ کی میٹنگ ہوئی، جس میں اس معاملے کو سپریم کورٹ میں چیلنج کرنے پر غور و خوض کیا گیا۔


کانگریس یا اس کی اتحادی ریاستی حکومتوں کے وزرائے اعلیٰ نے ان امتحانات کے انعقاد کو کووڈ ۔19 کے پیش نظر طلبہ کے ساتھ کھلواڑ قرار دیا اور فوراً اس پر پابندی عائد کرنے کا مطالبہ کیا۔ میٹنگ میں مغربی بنگال کی وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی، راجستھان کے وزیر اعلیٰ اشوک گہلوت، چھتیس گڑھ کے وزیر اعلیٰ بھوپیش سنگھ بگھیل، پنجاب کے وزیر اعلیٰ امریندر سنگھ، پڈوچیری کے وزیر اعلیٰ وی نارائن سامی، مہاراشٹر کے وزیر اعلیٰ ادھو ٹھاکرے اور جھارکھنڈ کے وزیر اعلیٰ ہیمنت سورین نے حصہ لیا۔



پورے من کے ساتھ لڑنی ہوگی بی جے پی کے خلاف لڑائی

بدھ کو ہوئی اس میٹنگ میں ممتا بنرجی، ہیمنت سورین، ادھو ٹھاکرے نے ساتھ میں کہا کہ مرکزی حکومت کی مخالفت میں کانگریس اور دوسری غیر این ڈی اے جماعتوں کو آدھے ادھورے من سے لڑائی نہیں لڑنی ہوگی۔ اگر لڑنا ہے تو اس کے لئے حتمی فیصلہ لینا ہوگا۔ بحث کا آغاز کرتے ہوئے مغربی بنگال کی وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی نے کہا کہ کس طرح سے کورونا انفیکشن کے دور میں ریاستی حکومت مغربی بنگال کے شہریوں کو ہر طبی سہولیات مفت مہیا کروا رہی ہے۔ اس دوران ممتا بنرجی نے الزام لگایا کہ مودی حکومت کی طرف سے ریاست کو کوئی بھی تعاون نہیں مل رہا ہےْ

نیوز ایجنسی یو این آئی اردو کے اِن پُٹ کے ساتھ۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Aug 26, 2020 10:44 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading