ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

راجیو گاندھی کو دئے گئے بھارت رتن ایوارڈ کو واپس لینے کا پھلکا نے کیا مطالبہ ، کانگریس کا دوٹوک جواب

نئی دہلی:عام آدمی پارٹی کےلیڈر اور وکیل ایچ ایس پھلکا نے 1984 کے سکھ فسادات کیلئے سابق وزیر اعظم راجیو گاندھی کو ذمہ دار قرار دیتے ہوئے انہیں دیا گیا بھارت رتن ایواردڈ واپس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: Nov 19, 2015 10:04 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
راجیو گاندھی کو دئے گئے بھارت رتن ایوارڈ کو واپس لینے کا پھلکا نے کیا مطالبہ ، کانگریس کا دوٹوک جواب
نئی دہلی:عام آدمی پارٹی کےلیڈر اور وکیل ایچ ایس پھلکا نے 1984 کے سکھ فسادات کیلئے سابق وزیر اعظم راجیو گاندھی کو ذمہ دار قرار دیتے ہوئے انہیں دیا گیا بھارت رتن ایواردڈ واپس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔

نئی دہلی:عام آدمی پارٹی کےلیڈر اور وکیل ایچ ایس پھلکا نے 1984 کے سکھ فسادات کیلئے سابق وزیر اعظم راجیو گاندھی کو ذمہ دار قرار دیتے ہوئے انہیں دیا گیا بھارت رتن ایواردڈ واپس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔


مسٹر پھلکا نے 1984 کے فسادات کی 31 ویں برسی پر آج یہاں ایک پریس کانفرنس میں فسادات کے کچھ دنوں بعد بوٹ کلب میں مسٹر گاندھی کی تقریر کا حوالہ دیتے ہوئے کہاکہ اس میں مسٹر گاندھی نے یہ کہا تھا کہ جب کوئی بڑا درخت گرتا ہے تو زمین ہلتی ہے۔


ان کے اس بیان نے فسادیوں کی جانب سے کئے گئے قتل عام کو جائز ٹھہرانے کا کام کیا تھا جبکہ ملک کا وزیر اعظم ہونے کے ناطے ان کے قاتلوں کو پکڑ کر سلاخوں کے پیچھے ڈالنا چاہئے تھا۔ ایسے شخص کو بھارت رتن کا اعزاز دینا بھارت رتن کی توہین ہے۔ ایسے ایوارڈ کا اصلی حقدار بھگت سنگھ اور سبھاش چندر بوس جیسے لیڈر ہیں نہ کہ مسٹر گاندھی جیسے لوگ۔


بھارتیہ جنتا پارٹی کے سکریٹری آر پی سنگھ نے اس موقع پر کہا کہ فساد ایک سوچی سمجھی پالیسی کا حصہ تھا اس لئے اس کے قصوروار آج تک کھلے عام گھوم رہے ہیں۔


پھلكا کے ان الزامات پر کانگریسی لیڈر ابھیشیک منو سنگھوی نے کہا کہ جھوٹے الزامات کی بنیاد پر راجیو گاندھی کو دیے گئے بھارت رتن کو واپس لینے کا مطالبہ کرنا غلط ہے۔ دوسرا میں یہ جاننا چاہتا ہوں کہ پھلكا اور آر پی سنگھ نے جو الزامات لگائے ہیں، وہ نظریاتی کم ہیں بلکہ سیاست سے حوصلہ افزائی زیادہ ہیں۔ کیا یہ دونوں مل کر سیاست کررہے ہیں۔


پھلكا نے مذمت کی تھی مودی کی، دہلی انتخابات کے وقت میں ، اب یہ ایک اوچھی سیاست کر رہے ہیں ، سکھوں کے نام پر۔ یہ بات بھلا دی جاتی ہے کہ کتنے کانگریسی لیڈروں کا کیریئر ختم ہوا۔ وزیر اعظم نے معافی مانگی ۔ کانگریس صدر نے بھی معافی مانگی ہے۔

First published: Nov 19, 2015 10:04 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading