ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

سیاچن : 15 دنوں میں برفانی تودہ گرنے کا دوسرا حادثہ ، برف میں دبنے سے دو جوان شہید

جنوبی سیاچن گلیشیئر میں تقریبا 18 ہزار فٹ کی اونچائی پر فوج کی ایک گشتی ٹیم تودہ گرنے کی زد میں آگئی ۔

  • Share this:
سیاچن : 15 دنوں میں برفانی تودہ گرنے کا دوسرا حادثہ ، برف میں دبنے سے دو جوان شہید
علامتی تصویر

جنوبی سیاچن گلیشیئر میں تقریبا 18 ہزار فٹ کی اونچائی پر فوج کی ایک گشتی ٹیم تودہ گرنے کی زد میں آگئی ۔ اس حادثہ میں فوج کے دو جوان شہید ہوگئے ۔  طوفان کے بعد ایولانچ ریسکیو ٹیم ( اے آر ٹی ) فورا حرکت میں آگئی اور فوج کی گشتی ٹیم کے زیادہ تر جوانوں کو باہر نکالنے میں کامیاب رہی ۔ ہیلی کاپٹر کے ذریعہ جوانوں کو محفوظ مقامات پر پہنچادیا گیا ہے ۔ حالانکہ تمام تر کوششوں کے باوجود دو جوانوں کی جانیں نہیں بچائی جاسکیں ۔



خیال رہے کہ کچھ دنوں قبل ہی دنیا کے سب سے اونچے جنگی علاقہ سیاچن گلیشیئر میں تودہ گرنے کے ایک واقعہ میں فوج کے چار جوان شہید ہوگئے تھے ۔ برف میں دبنے سے دو شہریوں کی بھی موت ہوگئی تھی ۔ فوج کے افسران کے مطابق جس علاقہ میں یہ حادثہ پیش آیا تھا ، وہ 19 ہزار فٹ یا اس سے بھی زیادہ کی اونچائی پر واقع ہے ۔

ہندوستانی فوج کے مطابق 19 نومبر کو 8 رکنی گشٹی ٹیم طوفان میں پھنس گئی تھی ۔ ان 8 میں سے سات بری طرح زخمی ہوگئے تھے ، جنہیں فورا میڈیکل ٹیم کے ساتھ ہیلی کاپٹر کے ذریعہ نزدیک کے اسپتال میں علاج کیلئے بھیج دیا گیا تھا ۔ لیکن چھ کی موت ہوگئی تھی ۔ ان چھ میں سے چار جوان اور دو قلی تھے ۔ ان سبھی کی موت ہائپوتھرمیا کی وجہ سے ہوئی تھی ۔ ہائیپوتھرمیا جسم کی وہ حالت ہوتی ہے ، جس میں بدن کی گرمی معمول سے بہت کم ہوجاتی ہے۔
First published: Nov 30, 2019 07:30 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading