ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

جموں و کشمیر : اوڑی میں سرحد پر کشیدگی کے پیش نظر 500 افراد محفوظ مقامات پر منتقل

شمالی کشمیر کے ضلع بارہمولہ میں لائن آف کنٹرول (ایل او سی) کے اوڑی سیکٹر میں سرحد پر کشیدگی کے پیش نظر 500 افراد محفوظ مقامات پر منتقل ہوگئے ہیں۔

  • UNI
  • Last Updated: Feb 23, 2018 06:33 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
جموں و کشمیر : اوڑی میں سرحد پر کشیدگی کے پیش نظر 500 افراد محفوظ مقامات پر منتقل
file photo

سری نگر: شمالی کشمیر کے ضلع بارہمولہ میں لائن آف کنٹرول (ایل او سی) کے اوڑی سیکٹر میں سرحد پر کشیدگی کے پیش نظر 500 افراد محفوظ مقامات پر منتقل ہوگئے ہیں۔ ریاستی پولیس سربراہ ڈاکٹر شیش پال وید نے یہ اطلاع دیتے ہوئے کہا ’اوڑی میں سرحد پار سے ہونے والی گولہ باری کے پیش نظر 500 لوگ محفوظ مقامات پر منتقل ہوگئے ہیں۔

ضلع مجسٹریٹ اور سینئر سپرنٹنڈنٹ آف پولیس (بارہمولہ) از خود موقع پر موجود ہیں‘۔ واضح رہے کہ اوڑی میں پاکستان کے ساتھ لگنے والی ایل او سی پر گذشتہ ایک ہفتے سے کشیدگی دیکھی جارہی ہے اور اس دوران پاکستانی فائرنگ کے نتیجے میں ایک بی ایس ایف اہلکار ہلاک، تین عام شہری زخمی اور متعدد رہائشی مکانات کو نقصان پہنچا۔اس دوران ریاستی پولیس کے ایک ترجمان نے بتایا کہ پاکستان کی طرف سے گذشتہ شام ضلع کپواڑہ کے کرناہ سیکٹر میں جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی کی گئی اور تاڑ و جبڑی نامی علاقوں کو نشانہ بنایا گیا۔

سرکاری ذرائع نے بتایا کہ پاکستان کی طرف سے جمعرات کو اوڑی کے چارنڈا اور تلہ واری میں جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی کی گئی تھی جس کے نتیجے میں تین رہائشی مکانات کو نقصان پہنچا ۔انہوں نے بتایا کہ ریاستی پولیس نے احتیاطی طور پر چورنڈا، سلکوٹ، تلہ واری، تھجل اور سونی نامی دیہات کے لوگوں کو محفوظ مقامات پر منتقل کردیا ہے۔

سرکاری ذرائع نے بتایا کہ پولیس اور مقامی انتظامیہ لوگوں کو مدد فراہم کرنے میں مصروف ہے۔ انہوں نے بتایا کہ پاکستان کی جانب سے بھارتی فوج کی اگلی چوکیوں اور سرحدی دیہات کو نشانہ بنایا جارہا ہے۔

First published: Feb 23, 2018 06:33 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading