ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

روہتک کے نالے میں ملی 6 سال کی بچی کی لاش، ریپ کے بعد قتل کا اندیشہ

بچی کی لاش نالے میں پڑے ہونے کی اطلاع ملنے پر سانپلا پولیس نے ایف ایس ایل کی ٹیم کوموقع پر بلایا اور بچی کی لاش کو نالے سے باہر نکلوایا۔

  • Share this:
روہتک کے نالے میں ملی 6 سال کی بچی کی لاش، ریپ کے بعد قتل کا اندیشہ
معاملے کی جانچ کرتی پولیس

روہتک کے سانپلا بائی پاس پر واقع زیر تعمیر تھانے میں کام کرنے والے مدھیہ پردیش کے  مزدور کی 6 سال کی بیٹی دوپہر قریب دو بجے لا پتہ ہو گئی۔ اہل  خانہ نے بچی کی تلاش شروع کردی۔ قریب دو گھنٹے بعد اہل خانہ نے اس بارے میں سانپلا پولیس کو معاملے کی اطلاع دی۔ معاملے کی خبر ملنے پر موقع پر پہنچی پولیس نے بچی کی تلاش شروع کر دی۔ اسی دوران کچھ مزدوروں نے شام قریب چھ بجے بچی کی لاش کو زیر تعمیر تھانے کی بلڈنگ سے کافی دور نالے میں پڑا ہوا دیکھا۔


بچی کی لاش نالے میں پڑے ہونے کی اطلاع ملنے پر سانپلا پولیس نے ایف ایس ایل کی ٹیم کوموقع پر بلایا اور بچی کی لاش کو نالے سے باہر نکلوایا۔ پولیس نے جائے حادثہ کا معائنہ کیا اور بچی کے اہل خانہ سے بھی پوچھ گچھ کی۔


اہل خانہ کو کسی انہونی کا اندیشہ ہے کیونکہ تھانے بلڈنگ سے نالے کی دوری کافی اور راستہ بھی عجیب ہے۔ پولیس یہ پتہ لگانے میں مصروف ہے کہ آخر بچی وہاں کیسے پہنچی۔ پولیس نے اہل خانہ کے بیان درج کر کے لاش پوسٹ مارٹم کیلئے بھیج دی ہے۔


سانپلا کے ایڈیشنل تھانہ انچارج  جگدیش چندر کا کہنا ہے کہ پوسٹ مارٹم کی رپورٹ آنے کے بعد ہی موت کی وجوہات کا صحیح پتہ چل پائے گا۔ پولیس معاملے کی سنجیدگی سے تفتیش کر رہی ہے۔
First published: Sep 18, 2018 12:47 PM IST