ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

رمضان میں ووٹنگ کولے کرعام آدمی پارٹی کے لیڈرسنجے سنگھ نے بھی الیکشن کمیشن پراٹھائے سوال

اس سے قبل سماجوادی پارٹی کے سینئرلیڈر ابوعاصم اعظمی نے کہا کہ مسلمانوں کے لئے روزہ رکھ کرووٹنگ کرنا تکلیف دہ ہے۔ رمضان میں ووٹنگ فیصد میں کمی آئے گی، جس کا فائدہ بی جے پی کوہوگا۔ 

  • Share this:
رمضان میں ووٹنگ کولے کرعام آدمی پارٹی کے لیڈرسنجے سنگھ نے بھی الیکشن کمیشن پراٹھائے سوال
عام آدمی پارٹی کے ترجمان اورراجیہ سبھا رکن سنجے سنگھ نےکہا کہ امریکہ کی یہ دھمکی صرف نریندرمودی کےلئے نہیں بلکہ ہندوستان کے 135 کروڑ عوام کو دھمکی ہے، ملک کی خودمختاری کو دھمکی ہے۔

الیکشن کمیشن کی طرف سے جاری کی گئی ووٹنگ کی تاریخون پراب عام آدمی پارٹی کے راجیہ سبھا ممبرپارلیمنٹ سنجے سنگھ نے بھی سوال اٹھائے ہیں۔ سنجے سنگھ نے ٹوئٹ کرکے رمضان کے مہینے میں الیکشن کرانے پراعتراض ظاہرکیا۔ انہوں نے کہا 'الیکشن کمیشن ووٹنگ میں حصہ لینے کی اپیل کے نام پرکروڑوں روپئے خرچ کررہا ہے، لیکن دوسری طرف تین فیزکا الیکشن پاک رمضان کے مہینے میں رکھ کرمسلم رائے دہندگان کی شراکت کو کم کرنے کا منصوبہ بنا دیا۔ تمام مذاہب کے تیوہاروں کا دھیان رکھوچیف الیکشن کمشنرصاحب'۔


واضح رہے کہ اس سے قبل سماجوادی پارٹی کے ممبراسمبلی اورمہاراشٹرکے ریاستی صدرابوعاصم اعظمی نے کہا کہ مسلمان کے لئے روزہ رکھ کرووٹ کرنا تکلیف دہ ہے۔ رمضان میں ووٹ فیصد میں کمی آئے گی، جس کا فائدہ بی جے پی کوہوگا۔


انہوں نے کہا کہ بی جے پی مسلمانوں سے ان کے رائے دہی کا حق چھیننا چاہتی ہے۔ مسلمان اس بار سیکولرپارٹیوں کوووٹ دینے کا من بناچکا ہے۔ رمضان میں آنے والے الیکشن کورمضان شروع ہونے سے پہلے کرالینا چاہئے۔




حالانکہ اس مسئلے پرآل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین کے صدراسدالدین اویسی نے رمضان کے ماہ میں الیکشن کی حمایت کی ہے اورمسلمانوں سے زیادہ سے زیادہ ووٹنگ کرنے کی اپیل کی ہے۔
First published: Mar 11, 2019 02:18 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading