உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    سیاہی معاملہ پر آشوتوش نے مرکز اور دہلی پولیس کو لیا آڑے ہاتھوں ، کہا :  کیجریوال کے قتل کی سازش ہو سکتی ہے

    نئی دہلی : دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال پر سیاہی پھینکے جانے کے واقعہ کو عام آدمی پارٹی نے بڑی سازش کا حصہ قرار دیا ہے۔ عآپ لیڈر آشوتوش نے پریس کانفرنس کر کے بڑی سازش کا اندیشہ ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ کیجریوال کے قتل کی سازش بھی ہو سکتی ہے۔ آشوتوش نے کہا کہ سیکورٹی میں چوک کی ذمہ داری طے ہونی چاہئے۔ آخر کون فیصلہ کرے گا۔

    نئی دہلی : دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال پر سیاہی پھینکے جانے کے واقعہ کو عام آدمی پارٹی نے بڑی سازش کا حصہ قرار دیا ہے۔ عآپ لیڈر آشوتوش نے پریس کانفرنس کر کے بڑی سازش کا اندیشہ ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ کیجریوال کے قتل کی سازش بھی ہو سکتی ہے۔ آشوتوش نے کہا کہ سیکورٹی میں چوک کی ذمہ داری طے ہونی چاہئے۔ آخر کون فیصلہ کرے گا۔

    • News18
    • Last Updated :
    • Share this:

      نئی دہلی : دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال پر سیاہی پھینکے جانے کے واقعہ کو عام آدمی پارٹی نے بڑی سازش کا حصہ قرار دیا ہے۔ عآپ لیڈر آشوتوش نے پریس کانفرنس کر کے بڑی سازش کا اندیشہ ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ کیجریوال کے قتل کی سازش بھی ہو سکتی ہے۔ آشوتوش نے کہا کہ سیکورٹی میں چوک کی ذمہ داری طے ہونی چاہئے۔ آخر کون فیصلہ کرے گا۔


      عآپ لیڈر آشوتوش نے کہا کہ ہم نے حکومت سے سیکورٹی نہیں مانگی تھی، لیکن حکومت نے خود ہی زیڈ پلس سیکورٹی دی تھی۔ اگر آپ نے سیکورٹی دی ہے ، تو چوک کیوں ہو رہی ہے۔ جنہوں نے بھی سیکورٹی دی ہے ، تو کیوں چوک ہو رہی ہے ۔ اس کا جواب وزیر اعظم اور دہلی پولیس کو دینا ہوگا۔


      انہوں نے کہا کہ کون لوگ کیجریوال کی مقبولیت سے خوفزدہ ہیں۔ کیجریوال لدھیانہ سے ٹرین میں لوٹتے ہیں اور ایک بھی پولیس اہلکار ان کے ساتھ نہیں تھا۔ کیا اس کا پیٹرن سمجھ نہیں آتا۔ ملک کے وزیر اعظم جواب دیں۔ اگر سیکورٹی میں چوک ہے ، تو سرکاری ایجنسی کو اس کی جانچ کر کے رپورٹ دینی چاہئے۔ ایسا ایسے وقت میں ہوا ہے ، جب پٹھان کوٹ حملے کے بعد ملک میں الرٹ ہے۔

      First published: