உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    سواتی ماليوال کے خلاف ایف آئی آڑ ، بھرتی میں دھاندلی کا الزام

     قومی خواتین کمیشن میں غلط طریقے سے 85 تقرریاں کرنے کا الزام جھیل رہی سواتی ماليوال کی مشکلیں مزید بڑھ گئی ہیں۔

    قومی خواتین کمیشن میں غلط طریقے سے 85 تقرریاں کرنے کا الزام جھیل رہی سواتی ماليوال کی مشکلیں مزید بڑھ گئی ہیں۔

    قومی خواتین کمیشن میں غلط طریقے سے 85 تقرریاں کرنے کا الزام جھیل رہی سواتی ماليوال کی مشکلیں مزید بڑھ گئی ہیں۔

    • IBN7
    • Last Updated :
    • Share this:
      نئی دہلی : قومی خواتین کمیشن میں غلط طریقے سے 85 تقرریاں کرنے کا الزام جھیل رہی سواتی ماليوال کی مشکلیں مزید بڑھ گئی ہیں۔ اینٹی کرپشن بیورو اے سی بی نے پرونشن آف کرپشن ایکٹ کے تحت سواتی ماليوال سمیت کئی لوگوں کے خلاف مقدمہ درج کر لیا ہے۔
      ادھر سواتی ماليوال نے ٹویٹ کر کے اپنا موقف رکھتے ہوئے لکھا کہ پتہ چلا ہے کہ ایف آئی آر ہوئی ہے۔ جب غلط کام نہیں کیا ، ہو تو خدا سے بھی نہیں ڈرنا چاہئے۔ نظام کو تبدیل کرنے کے لئے کام کریں گے ، تو قربانی تو دینی ہی پڑے گی۔ انہوں نے لکھا کہ جو بھرتی کا طریقہ ڈی سی ڈبلیو میں سالوں سے اپنایا گیا ، وہی اپنایا ہے۔
      خیال رہے کہ دہلی خواتین کی سابق صدر برکھا سنگھ نے کمیشن میں غلط طریقے سے 85 تقرریوں اور غلط تنخواہ دینے کی اے سی بی سے شکایت کی تھی ، جس کے بعد پیر کو اے سی بی نے خواتین کمیشن کی صدر سواتی ماليوال سے پوچھ گچھ کی ۔ تقریبا 2 گھنٹے تک چلی پوچھ گچھ میں اے سی بی کی ٹیم نے سواتی ماليوال سے 27 سوالات کے جواب مانگے تھے۔ اس دوران اے سی بی نے کچھ اہم دستاویزات بھی ضبط کئے تھے۔
      اپنی شکایت میں برکھا سنگھ نے دعوی کیا تھا کہ عام آدمی پارٹی کے کئی حامیوں کو ڈی سی ڈبلیو میں عہدہ دیا گیا ہے۔ برکھا سنگھ نے اپنی شکایت میں 85 لوگوں کا نام دیا ہے۔ انہوں نے دعوی کیا ہے کہ انہیں ضروری اہلیت کے بغیر ہی کام نوکری دی گئی ہے۔
      First published: