ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

ایجنڈا دہلی: شاہین باغ پر بولے روی شنکر پرساد۔ بات چیت کی تجویز پر 60 گھنٹے بعد بھی نہیں ملا جواب

غور طلب ہے کہ شہریت ترمیمی قانون اور قومی شہریت رجسٹر کے خلاف دہلی کے شاہین باغ میں پچھلے ڈیڑھ مہینے سے احتجاج چل رہا ہے۔

  • Share this:
ایجنڈا دہلی: شاہین باغ پر بولے روی شنکر پرساد۔ بات چیت کی تجویز پر 60 گھنٹے بعد بھی نہیں ملا جواب
روی شنکر پرساد

نئی دہلی۔ نیوز 18 انڈیا کے پروگرام میں مرکزی وزیر روی شنکر پرساد (Ravi Shankar Prasad) نے پیر کے روز شاہین باغ (Shaheen Bagh) کے مظاہرین پر بڑا بیان دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ شاہین باغ کے احتجاج کاروں کو بات چیت کی تجویز دئیے 60 گھنٹے گزر چکے ہیں لیکن ابھی تک ان کی طرف سے کوئی جواب نہیں ملا ہے۔ غور طلب ہے کہ شہریت ترمیمی قانون (Citizenship Amendment Act) اور قومی شہریت رجسٹر (National Register of Citizens) کے خلاف دہلی کے شاہین باغ میں پچھلے ڈیڑھ مہینے سے احتجاج چل رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس ملک کو اب کوئی توڑ نہیں سکتا ہے۔ روی شنکر پرساد نے کہا کہ کچھ لوگ چاہتے ہیں کہ الیکشن سے پہلے خرافات ہو۔




مرکزی وزیر نے کہا کہ شاہین باغ میں جو ہماری بہنیں بیٹھی ہیں ہم ان سے بات کریں گے۔ لیکن شاہین باغ میں بات چیت نہیں ہو گی۔ وہ جگہ بات چیت کرنے کی نہیں ہے۔ اسٹرکچرڈ طریقے سے آئیے اور بات کیجئے۔ انہوں نے کہا کہ شہریت ترمیمی قانون کسی ہندوستانی کی شہریت نہیں لیتا ہے۔ انہوں نے لوگوں کو چیلنج کیا کہ سی اے اے قانون میں کوئی ایک ایسا شق دکھا دو جس سے ہندوستانی مسلمانوں کی شہریت جاتی ہو۔ روی شنکر نے یہ بھی کہا کہ شاہین باغ ایک جغرافیائی علاقہ نہیں بلکہ ایک نظریہ بن گیا ہے۔



روی شنکر پرساد نے کہا کہ شاہین باغ دھرنا کے مقام پر گولی چلانے والوں کو میں صحیح نہیں مانتا۔ میں ان کے ساتھ نہیں ہوں۔ قصورواروں پر کارروائی ہونی چاہئے۔

First published: Feb 03, 2020 12:14 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading