ہوم » نیوز » No Category

آگرہ کے ایک ہاسٹل میں مبینہ طور پر بیف کھائے جانے کےمعاملے کی مجسٹریٹی جانچ کا حکم

آگرہ ۔ اتر پردیش کے آگرہ شہر کے مرکزی ہندی ادارے کے ہاسٹل میں مبینہ طور پر بیف کھائے جانے کےمعاملے کی مجسٹریٹی جانچ کا حکم دیا گیا ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: Mar 19, 2016 05:05 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
آگرہ  کے ایک ہاسٹل میں مبینہ طور پر بیف کھائے جانے کےمعاملے کی مجسٹریٹی جانچ کا حکم
آگرہ ۔ اتر پردیش کے آگرہ شہر کے مرکزی ہندی ادارے کے ہاسٹل میں مبینہ طور پر بیف کھائے جانے کےمعاملے کی مجسٹریٹی جانچ کا حکم دیا گیا ہے۔

آگرہ ۔ اتر پردیش کے آگرہ شہر کے مرکزی ہندی ادارے کے ہاسٹل میں مبینہ طور پر بیف کھائے جانے کےمعاملے کی مجسٹریٹی جانچ کا حکم دیا گیا ہے۔ ادارے کے ہاسٹل میں جمعرات کو دیر رات بیف کھائے جانے کا ویڈیو وائرل ہوتے ہی ہنگامہ برپا ہوگیا تھا۔وشو ہندو پریشد (وی ایچ پی )نے اس سلسلے میں دھرنا دے کر مظاہرہ شروع کردیا ۔ ڈسٹرکٹ مجسٹریٹ پنکج کمار نے آج یہاں یواین آئی کو بتایا کہ معاملے کی سنگینی کو دیکھتے ہوئے اس کی جانچ سٹی مجسٹریٹ کو سونپی گئی ہے۔سٹی مجسٹریٹ سےجلد ہی انکوائری رپورٹ پیش کرنے کے لئے کہاگیا ہے۔مسٹر کمار نے کہا کہ رجسٹرار کے مطابق ادارے میں گوشت کھانا ممنوع ہے۔اس لحاظ سے بھی جانچ کی جائے گی۔جانچ کی رپورٹ کے مطابق کارروائی کی جائے گی۔



اس درمیان معاملے کی تفتیش کررہی سٹی مجسٹریٹ ریکھا ایس چوہان نے کہا کہ ویڈیو میں افغانستان، ازبکستان اور تاجکستان کے ایک ایک طالب علم کا چہرہ دکھائی دے رہا ہے۔تفتیش کےلئے کل رات وہ پولس کےساتھ ہاسٹل گئی تھیں ۔چھٹی ہونے کی وجہ سے ملزم طلبا سے ملاقات نہیں ہوسکی ہے۔وہ آج پھر موقع کا دورہ کریں گی۔ محترمہ چوہان نے بتایا کہ ملزمین کے بارے میں ثبوت یکجا کرنے کی کوشش کی جارہی ہے ۔چھٹیوں کے بعد تفتیشی رپورٹ پیش کی جائےگی۔انہوں نے کہا کہ فوٹووائرل کئےجانے کی بھی تفتیش کی جائے گی۔تفتیش میں قصوروارپائے جانے والوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔


ادارہ اپنی جانب سے بھی معاملے کی تفتیش کر رہا ہے۔ وائس چانسلر چندر کانت ترپاٹھی نےبتایا کہ ادارے کے احاطے میں گوشت کھانا ممنوع ہے اس کے باوجود اگر کسی طالب علم نے گوشت کھایا ہوگا تو اس کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔ دوسری جانب اس معاملے پر سیاست بھی شروع ہوگئی ہے۔وی ایچ پی نے وارننگ دی ہے کہ اگر بیف کھانے والے ملزمین کے خلاف کارروائی نہیں ہوئی تو تحریک شروع کی جائے گی۔


First published: Mar 19, 2016 05:05 PM IST