உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    این ڈی اے کی صدارتی امیدوار Draupadi Murmu کو AIADMK کی جانب سے بھی حمایت

    Youtube Video

    مرمو کی آمد پر ایک فائیو اسٹار ہوٹل میں ان کا پرتپاک استقبال کیا گیا۔ مرکزی وزیر ایل مروگن، بی جے پی صدر کے اناملائی اور پارٹی کے قانون ساز اور بی جے پی مہیلا مورچہ کی قومی صدر وناتھی سری نواسن بھی موجود تھے جب پلانی سوامی نے صدارتی امیدوار کا استقبال کیا۔

    • Share this:
      این ڈی اے کی صدارتی امیدوار دروپدی مرمو (Draupadi Murmu) نے ہفتہ کو بی جے پی کے اتحادیوں سے ملاقات کی اور ان کی حمایت حاصل کی۔ اپنے تین گھنٹے کے دورہ کے دوران دروپدی مرمو نے اے آئی اے ڈی ایم کے (AIADMK) کے رہنماؤں کے پالانیسوامی اور او پننیر سیولم ، تمل مانیلا کانگریس کے صدر جی کے واسن، اور پٹالی مکل کاچی کے صدر ڈاکٹر انبومانی رامادوس سے ملاقات کی، جنہوں نے اپنی حمایت کا اعلان کیا۔

      پنیرسیلوم نے ان کے ساتھ بات چیت کے دوران کہا کہ اگرچہ آپ کی جیت تقریباً قریب ہے، آپ تمل ناڈو کے ایم ایل ایز اور ایم پیز کی حمایت حاصل کرنے کے لیے چنئائی آئے ہیں۔ یہ آپ کی سادگی اور عاجزی کو ظاہر کرتا ہے۔ مرمو کو ہندوستان کے اگلے صدر کے طور پر دیکھ کر بہت خوشی ہوگی۔

      پلانی سوامی کو بظاہر پنیرسیلوم کو پیچھے چھوڑ کر AIADMK کے اگلے واحد لیڈر کے طور پر پیش کیا جا رہا ہے، وہ ریاست کے پہلے رہنما تھے جنہوں نے مرمو کو شال اور گلدستے سے خوش آمدید کہا۔ انہوں نے 18 جولائی کو ہونے والے صدارتی انتخابات میں مرمو کے لیے AIADMK کی حمایت کا تہہ دل سے وعدہ کیا۔ پلانی سوامی اور پنیر سیلوم نے اپنے حامیوں کے ساتھ الگ الگ مرمو سے ملاقات کی۔ جو اپنی پارٹی کی واحد قیادت کے معاملے پر آپس میں جھگڑ رہے ہیں۔

      مزید پڑھیں: Cryptoqueen:وہ حسین ڈاکٹر جس نے کرپٹو کے نام پر لگایا32 ہزار کروڑ کا چونا، تلاش کرنے والوں کو ملے گا ایک لاکھ ڈالر


      مرمو کی آمد پر ایک فائیو اسٹار ہوٹل میں ان کا پرتپاک استقبال کیا گیا۔ مرکزی وزیر ایل مروگن، بی جے پی صدر کے اناملائی اور پارٹی کے قانون ساز اور بی جے پی مہیلا مورچہ کی قومی صدر وناتھی سری نواسن بھی موجود تھے جب پلانی سوامی نے صدارتی امیدوار کا استقبال کیا۔

      یہ بھی پڑھیں: America: روس کے خلاف امریکہ کی بڑی کاروائی! 1 بلین ڈالر سے زائد کمپنی پر پابندی

      پنیرسیلوم نے کہا کہ ہندوستان کے صدر کے طور پر ان کے انتخاب کے ساتھ یہ پہلی بار ہوگا کہ پسماندہ طبقات سے تعلق رکھنے والی ایک خاتون کو ہندوستان کی اعلیٰ ترین کرسی پر قبضہ کرنے کا موقع ملے گا۔ یہ خواتین اور پسماندہ افراد کو بااختیار بنانے کے تئیں وزیر اعظم نریندر مودی جی کے وژن کو ظاہر کرتا ہے۔

      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: