ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

اترپردیش : ہتھیاروں کی اسمگلنگ کے الزام میں پولیس نے مجلس اتحاد المسلمین کے ضلع صدر کو کیا گرفتار

اترپردیش کی مہوبہ پولیس نے آج ایک بڑی کارروائی کرتے ہوئے آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین (اے آئی ایم آئی ایم) کے ضلع صدر کو غیر قانونی اسلحہ کی اسمگلنگ کے الزام میں گرفتار کیا ہے

  • UNI
  • Last Updated: Nov 19, 2017 09:12 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
اترپردیش : ہتھیاروں کی اسمگلنگ کے الزام میں پولیس نے مجلس اتحاد المسلمین کے ضلع صدر کو کیا گرفتار
علامتی تصویر

مہوبہ: اترپردیش کی مہوبہ پولیس نے آج ایک بڑی کارروائی کرتے ہوئے آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین (اے آئی ایم آئی ایم) کے ضلع صدر کو غیر قانونی اسلحہ کی اسمگلنگ کے الزام میں گرفتار کیا ہے اور اس کے پاس سے ہتھیاروں کازخیرہ برآمد کیا گیا ہے۔پولیس سپرنٹنڈنٹ این کولانچی نے کہا کہ مدھیہ پردیش پولیس کےتعاون سے صدر کوتوالی کے باٹیپورہ علاقے میں ایک مکان پر چھاپہ مارا گیا تھا۔

تاہم، چھاپے کی بھنک ملنےپر اسمگلر گروہ کا سرغنہ سعید خان فرار ہونے میں کامیاب ہوگیا۔پولس نے موقع سے اس کے بیٹے شکیب خان اسلحہ کے ساتھ گرفتار کیا ہے۔ اسلحہ ایک بیگ میں چھپا کر رکھا گیا تھا۔ برآمد ہتھیاروں میں 315 بور کے 16 طمنچے، تین پستول، چار میگزین شامل ہیں ۔اس کے علاوہ تقریبا چھ کلوگرام وزن کی آثار قدیمہ کی بھگوان بدھ کی مورتی بھی برآمد کی گئی ہے۔

مسٹر کولانچی نے کہا کہ پولیس کے ذریعہ گرفتار کیا گیا ہتھیار اسمگلر اے آئی ایم آئی ایم پارٹی کا ضلع صدر ہے۔برامد بھگوان بد ھ کے مجسمہ کے سلسلے میں معلومات حاصل کی جا رہی ہے۔ملزم پہلے بھی اس طرح کی سرگرمیوں میں گرفتار کیا جا چکا ہے۔پولیس ملزم سے پوچھ گچھ کر رہی ہے اور اس کے دیگر ساتھیوں کے سلسلے میں معلومات حاصل کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے۔

First published: Nov 19, 2017 09:12 PM IST