ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

پال گھر ہجومی تشدد میں سادھوؤں کے قتل کے لئے مہاراشٹر حکومت ذمہ دار: اکھل بھارتیہ اکھاڑا پریشد

اکھاڑا پریشد نے مرکزی حکومت سے اس پورے معاملے کی جانچ سی بی آئی سے کرانے اور مہاراشٹر کی ادھو ٹھاکرے حکومت کو برخاست کرنے کا مطالبہ کیا ہے ۔

  • Share this:
پال گھر ہجومی تشدد میں سادھوؤں کے قتل کے لئے مہاراشٹر حکومت ذمہ دار: اکھل بھارتیہ اکھاڑا پریشد
پال گھر ہجومی تشدد میں سادھوؤں کے قتل کے لئے مہاراشٹر حکومت ذمہ دار: اکھل بھارتیہ اکھاڑا پریشد

الہ آباد۔ مہاراشٹر کے پال گھر میں ہجومی تشدد کے ذریعے جونا اکھاڑے کے دو سادھوؤں کے قتل واقعے پر اکھل بھارتیہ اکھاڑا پریشد نے اپنے شدید رد عمل کا اظہار کیا ہے ۔اکھاڑا پریشد کے صدر مہنت نرندر گری نے سادھوؤں کے قتل کی ذمہ داری مہاراشٹر حکومت اور مقامی پولیس پر ڈالی ہے ۔


اکھاڑا پریشد کا کہنا ہے کہ جس طرح سے دونوں سادھوؤں اور ان کے ڈرائیور کا منظم طریقے سے قتل کیا گیا ہے، اس سے کئی طرح کے سوال  کھڑے ہوتے ہیں ۔اکھاڑا پریشد نے مرکزی حکومت سے اس پورے معاملے کی جانچ سی بی آئی سے کرانے اور  مہاراشٹر کی ادھو ٹھاکرے  حکومت کو برخاست کرنے کا مطالبہ کیا ہے ۔اکھاڑا پریشد کے صدر مہنت نرندر گی کا یہ بھی کہنا ہے کہ اکھاڑا پریشد اس معاملے میں جلد ہی کو ئی اہم فیصلہ لے گا ۔ اکھاڑا پریشد کا کہنا ہے کہ لاک ڈاؤن ہونے کے با وجود پال گھر میں  اتنی بڑی تعداد میں لوگ ایک جگہ پر کیسے جمع ہو گئے ؟ اکھاڑا پریشد نے اس پورے معاملے میں پولیس کے کردار پر بھی سنگین سوال اٹھائے ہیں ۔


اکھاڑا پریشد کے صدر مہنت نرندر گی کا یہ بھی کہنا ہے کہ اکھاڑا پریشد اس معاملے میں جلد ہی کو ئی اہم فیصلہ لے گا ۔


مہنت نرندر گری کا  کہنا ہے کہ پولیس کی موجودگی میں تین افراد کو  پیٹ پیٹ کر قتل دینا ایک سنگین جرم ہے جس کو اکھاڑا پریشد قطعی برداشت نہیں کرے گا۔ مہنت نرندر گری کا کہنا تھا کہ لاک ڈاؤن ختم ہوتے ہی اکھاڑا پریشد اس معاملے میں تمام سادھو سنتوں کی میٹنگ کرکے آئندہ کے لائحہ عمل طے کرے گا ۔ان کا کہنا تھا کہ سادھوؤں کے قتل کے خلاف بڑی تحریک چلائی جائے گی ۔

واضح رہے کہ اکھل  بھارتیہ  اکھاڑا پریشد میں گیارہ اکھاڑے شامل ہیں جس میں جونا اکھاڑا سادھو سنتوں کا سب سے بڑا اکھاڑا سمجھا جاتا ہے ۔خود اکھاڑا پریشد کے صدر مہنت نرندر گری کا تعلق بھی جونا اکھاڑے سے ہے ۔پال گھر میں ہجومی تشدد کا شکار ہونے والے سادھو مہنت کلپ ورکش  گری (۷۰) مہنت سشیل  گری (۳۵) اور ان کے ڈرائیور نیلیش تیگڑے (۳۰)  ممبئی سے گجرات کی طرف  کار سے جا رہے تھے ۔ اسی دوران پال گھر علاقے میں ایک بڑے ہجوم نے ان تینوں افراد کو پیٹ پیٹ کر مار ڈالا تھا ۔
Published by: Nadeem Ahmad
First published: Apr 20, 2020 06:15 PM IST