உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    اترپردیش : راجیہ سبھا انتخابات کیلئے اکھلیش یادو کی ڈنر ڈپلومیسی ، چچا شیو پال بھی پہنچے

    اترپردیش میں 23 مارچ کو راجیہ سبھا کی 10 سیٹوں کیلئے ہونے جارہے الیکشن میں ووٹوں کو لے کر سبھی پارٹیاں جوڑ توڑ میں مصروف ہیں ۔

    اترپردیش میں 23 مارچ کو راجیہ سبھا کی 10 سیٹوں کیلئے ہونے جارہے الیکشن میں ووٹوں کو لے کر سبھی پارٹیاں جوڑ توڑ میں مصروف ہیں ۔

    اترپردیش میں 23 مارچ کو راجیہ سبھا کی 10 سیٹوں کیلئے ہونے جارہے الیکشن میں ووٹوں کو لے کر سبھی پارٹیاں جوڑ توڑ میں مصروف ہیں ۔

    • Share this:
      لکھنو : اترپردیش میں 23 مارچ کو راجیہ سبھا کی 10 سیٹوں کیلئے ہونے جارہے الیکشن میں ووٹوں کو لے کر سبھی پارٹیاں جوڑ توڑ میں مصروف ہیں ۔ اسی سلسلہ میں بدھ کو اترپردیش کے وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ نے چائے پر چرچا کی تو سابق وزیر اعلی اکھلیش یادو نے ڈنر ڈپلومیسی کا سہارا لیا ۔ سب کی دلچسپی دونوں لیڈروں کے پروگرام میں شریک ممبران پر تھیں ۔ یوگی کی چائے پر چرچا میں حال ہی بی جے پی میں شامل ہوئے نریش اگروال کے بیٹے اور ایس پی ممبر اسمبلی نتن اگروال پر تھی تو وہیں اکھلیش یادو کی پارٹی میں ملائم سنگھ کے علاوہ چچا شیو پال ، ڈمپل یادو سمیت تقریبا سبھی سماجوادی لیڈر شامل ہوئے ۔
      در اصل یو پی میں راجیہ سبھا کی 10 سیٹوں کیلئے جمعہ کو ووٹ ڈالے جائیں گے۔ 8 سیٹوں پر بی جے پی کی جیت یقینی ہے تو وہیں ایک سیٹ سماجوادی پارٹی کے کھاتے میں جائے گی ۔ اس کے علاوہ دسویں سیٹ پر بی جے پی اور بی ایس پی کے امیدوار کے درمیان مقابلہ ہے ۔ بی جے پی نے انل اگروال اور بی ایس پی نے بھیم راو امبیڈکر کو میدان میں اتارا ہے ۔ ایس پی اور کانگریس نے بی ایس پی کی حمایت کا اعلان کیا ہے۔
      قبل ازیں اکھلیش نے پارٹی ممبران اسمبلی اور لیڈروں کی میٹنگ میں بی جے پی پر نشانہ سادھا۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی منمانی پر اتری ہوئی ہے ۔ اگر بی جے پی کو ذرا بھی جمہوری اقدار کی پرواہ ہوتی تو وہ راجیہ سبھا کیلئے نواں امیدوار نہیں اتارتی ۔
      First published: