ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

علی گڑھ : ویمنس کالج میں خواتین کیلئے محفوظ ماحول کی تشکیل اور جنسی برابری کا سلوک روا رکھنے کا لیا گیاحلف

علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کے انٹرنل کمپلینٹ کمیٹی کی تحریک پر ویمنس کالج میں ایک خصوصی تقریب کا انعقاد کرکے خواتین کے لئے محفوظ ماحول اور جنسی برابری کے رویے کو عام کرنے کا حلف لیا گیا

  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
علی گڑھ : ویمنس کالج میں خواتین کیلئے محفوظ ماحول کی تشکیل اور جنسی برابری کا سلوک روا رکھنے کا لیا گیاحلف
علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کے انٹرنل کمپلینٹ کمیٹی کی تحریک پر ویمنس کالج میں ایک خصوصی تقریب کا انعقاد کرکے خواتین کے لئے محفوظ ماحول اور جنسی برابری کے رویے کو عام کرنے کا حلف لیا گیا

علی گڑھ : علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کے انٹرنل کمپلینٹ کمیٹی کی تحریک پر ویمنس کالج میں ایک خصوصی تقریب کا انعقاد کرکے خواتین کے لئے محفوظ ماحول اور جنسی برابری کے رویے کو عام کرنے کا حلف لیا گیا۔بین الاقوامی یوم خواتین کے موقع پر منائی جانے والی تقریبات کے تحت ویمنس کالج میدان میں منعقدہ تقریب سے خطاب کے دوران پرنسپل پروفیسر نعیمہ خاتون نے کہا ملک کی ترقی کی راہ میں جنسی نابرابری،جنس کی بنیاد پر بھید بھاو، خواتین کا استحصال ایک بڑی رکاوٹ ہے۔

انہوں نے کہا کہ تعلیمی اداروں کے ذمہ داران کو ان برایئوں کو جڑ سے مٹانے کے لئے نہ صرف یہ کہ سماج میں بیداری پیدا کرنی چاہیے بلکہ اس کے خاتمہ کے لئے کوشاں بھی ہونا چاہیے۔انھوں نے کہا کہ خواتین پر مظالم اور نا انصافیوں کو دور کرکے ہی معاشرہ کو بہتر بنایا جا سکتا ہے۔خواتین کے تحفظ اور احترام کے لئے فضابندی کرکے ہم سب اپنا تعاون دے سکتے ہیں۔

اس موقع پر موجود اساتذہ وطالبات اور دیگر اسٹاف کو یہ حلف دلایا گیا کہ وہ خواتین کے لئے محفوظ فضا بنانے اورخواتین کے استحصال اور جنسی بھیدبھائو کو روکنے میں اپنا پورا تعاون دیں گے۔یہ بھی حلف دلایا گیا کہ وہ خود بھی جنسی برابری کی مثال قائم کرتے ہوئے نمایا کارکردگی پیش کریں گے۔ نیزجنسی استحصال و بھید بھائو کی واردات کو ہوتے ہوے دیکھنے پر فوری طور پر متعلقہ محکمہ یا ادارے کو ریپورٹ کریں گے۔

تقریب کے دوران پروفیسر نکہت تاج،پروفیسر رومانہ صدیقی،ڈاکٹرمنیرہ ٹی،ڈاکٹرغلام سرور ساجد،ڈاکٹرفیاض احمد،ڈاکٹر مہ جبیں،ڈاکٹر منصور عالم،ڈاکٹر محمد عمران کے علاوہ اسٹوڈنٹ یونین اراکین اور کثیر تعداد میں طالبات موجود رہیں۔

First published: Mar 09, 2018 11:00 PM IST