ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

نکاح حلالہ پرپابندی نہیں لگائی جاسکتی ہے: مسلم پرسنل بورڈ کا لاکمیشن کوتحریری جواب

مسلم پرسنل لا بورڈ سے متعلق لا کمیشن کے ذریعہ اٹھائے گئے چاروں اہم اور بڑے سوالات کا آج آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ نے تحریری جواب دے دیا ہے۔

  • Share this:
نکاح حلالہ پرپابندی نہیں لگائی جاسکتی ہے: مسلم پرسنل بورڈ کا لاکمیشن کوتحریری جواب
مسلم پرسنل لا بورڈ سے متعلق لا کمیشن کے ذریعہ اٹھائے گئے چاروں اہم اور بڑے سوالات کا آج آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ نے تحریری جواب دے دیا ہے۔

نئی دہلی: مسلم  پرسنل لا بورڈ سے متعلق لا کمیشن کے ذریعہ اٹھائے گئے چاروں اہم اور بڑے سوالات کا آج آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ نے جواب دے دیا ہے۔ لا کمیشن کو یہ جواب تحریری طورپردیا گیا ہے۔


مسلم پرسنل لا بورڈ کے رکن قاسم رسول الیاس نے نیوز 18 اردو سے بات کرتے ہوئے کہا کہ سوشل ریفارم کے لئے مسلم پرسنل لا بورڈ تیار ہے۔ تاہم وہ اسلام میں کوئی تبدیلی نہیں چاہتی۔  انہوں نے واضح کیا کہ نہ تو نکاح حلالہ پر پابندی لگائی جاسکتی ہے اورنہ ہی ملک میں یونیفارم سول کوڈ لاگو کیا جاسکتا ہے۔


قاسم رسول الیاس نے کہا کہ لڑکیوں کو وراثت میں لڑکوں کے مقابلے اس لئے نصف حصہ ملتا ہے کیونکہ ان پرکوئی ذمہ داری نہیں دی گئی ہے، اسی طرح بچہ گود لینے کے معاملے میں قانون ولدیت تبدیل کردیتا ہے،  جبکہ اسلام میں ولدیت تبدیل کرنے کی اجازت نہیں دی جاسکتی ہے۔  اسی طرح دادا کی جائیداد میں پوتے کے حق وراثت کو لے کربورڈ نے کہا کہ دادا ایک تہائی وصیت کرسکتا ہے اورجو شخص زندہ ہے اس کو اپنی جائیداد اپنے اعتبار سے تقسیم کرنے کا پورا حق ہے جبکہ اسلام میں مرنے کے بعد ہی وراثت بچوں تک جاتی ہے۔


 
First published: Jul 31, 2018 09:39 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading