ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

مسجدوں میں عید الفطر کی نماز ادا کرنے لئے نہ بنایا جائے دباؤ

عید الفطر کی نماز مسجد میں ادا کرانے کے لئے آئمہ مساجد پر کسی بھی طرح کا دباؤ نہ ڈالنے کی اپیل کی گئی ہے۔ یو پی کے بعض شہروں کے آئمہ مساجد نے شکایت کی تھی کہ مقامی آبادی سے تعلق رکھنے والے بعض افراد کی طرف سے عید الفطر کی نماز مسجد میں کرانے پر زور دیا جا رہا ہ

  • Share this:
مسجدوں میں عید الفطر کی نماز ادا کرنے لئے نہ بنایا جائے دباؤ
عید الفطر کی نماز مسجد میں ادا کرانے کے لئے آئمہ مساجد پر کسی بھی طرح کا دباؤ نہ ڈالنے کی اپیل کی گئی ہے۔ یو پی کے بعض شہروں کے آئمہ مساجد نے شکایت کی تھی کہ مقامی آبادی سے تعلق رکھنے والے بعض افراد کی طرف سے عید الفطر کی نماز مسجد میں کرانے پر زور دیا جا رہا ہ

عید الفطر کی نماز مسجد میں ادا کرانے کے لئے آئمہ مساجد پر کسی بھی  طرح کا  دباؤ  نہ ڈالنے کی اپیل کی گئی ہے۔ یو پی  کے بعض شہروں کے آئمہ مساجد نے شکایت کی تھی کہ مقامی آبادی سے تعلق رکھنے والے بعض افراد کی طرف سے عید الفطر کی نماز مسجد میں کرانے پر زور دیا جا رہا ہے۔ آئمہ مساجد کی ان شکایتوں کے  بعد   سے سماج کے با شعور طبقے اور سماجی کارکنان نے   مورچہ سنبھال  لیا ہے.


لاک ڈاؤن اور کورونا وائرس کے خطرات کو دیکھتے ہوئے عید الفطر کی نماز گھروں  میں ہی ادا کرنے کی عوامی اپیل میں تیزی آ گئی ہے ۔الہ آباد میں علمائے دین کی اپیل کے بعد سماجی کارکنان نے عید الفطر کی نماز گھروں میں ہی ادا کرنے کی  مہم چلائی ہے ۔سماجی کارکنان   مقامی لوگوں سے اس بات کا وعدہ لے رہے ہیں  کہ وہ عید الفطر کے دن کسی بھی حال میں مسجدوں میں نماز ادا کرنے کی کوشش نہیں کریں گے۔


سماجی کار کن حسیب احمد  اس مہم میں پیش پیش ہیں ۔ان کا کہنا ہے کہ اس وقت سماجی فاصلے کو قائم رکھنا اور کورونا وائرس   کو پھیلنے سے روکنا سب  سے بڑی ذمہ داری ہے ۔حسیب احمد   نے   مسلمانوں سے اپیل کی ہے کہ وہ عید الفطر کی نماز  مسجد میں ادا کرانے کے لئے مقامی آئمہ مساجد پر کسی  بھی طرح کا دباؤ نہ ڈالیں ۔سماجی کارکنان  عوام سے یہ بھی اپیل کر رہے ہیں  کہ وہ اپنے اپنے علاقوں کی  مسجدوں میں نماز پڑھانے والے   آئمہ پر عید کی نماز  پڑھانے کا  قطعی دباؤ نہ ڈالیں ۔سماجی کارکنا ن کا کہنا ہے کہ جس طرح جمعۃ الوداع کی نماز گھروں میں ادا کی گئی  ہے. ٹھیک  اسی طرح عید الفطر کی نماز بھی لوگ  اپنے اپنے  گھروں میں  ہی ادا کریں۔


واضح رہے کہ   عید الفطر کی نماز مسجدوں میں ادا کرنے کے بارے میں  عوام میں غلط فہمی اس وقت پیدا  ہوئی جب  الہ آباد ہائی کورٹ کے وکیل  شاہد صدیقی نے گذشتہ ۲۰؍ مئی کو ہائی کورٹ میں  ایک عرضی داخل کی۔شاہد صدیقی نے اس عرضی میں  ہائی کورٹ سے  عید الفطر کی نماز مسجدوں میں ا دا کرنے کی اجازت دینے کی درخواست کی تھی  ۔گرچے ہائی کورٹ نے شاہد صدیقی کی عرضی کو خارج کر دیا تھا ۔تاہم  انہوں نے عدالت کے مشورے سے اپنی عرضی یوگی حکومت کے پاس بھیج دی  ہے ۔یو گی حکومت نے ابھی تک شاہد صدیقی کی اس درخواست پر کوئی جواب نہیں دیا ہے ۔
First published: May 23, 2020 05:57 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading