ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

امانت اللہ خان دوسری بار بلامقابلہ وقف بورڈ کے چیئرمین منتخب، سرخیوں میں رہنے والے لیڈر کی ذمہ داری میں اضافہ

دوبارہ چیئرمین منتخب ہونے کے بعد امانت اللہ خان نے ایک بار پھراپنے عزم اورارادے کا اعادہ کیا ہے۔

  • Share this:
امانت اللہ خان دوسری بار بلامقابلہ وقف بورڈ کے چیئرمین منتخب، سرخیوں میں رہنے والے لیڈر کی ذمہ داری میں اضافہ
امانت اللہ خان دوبارہ دہلی وقف بورڈ کے چیئرمین منتخب۔

عام آدمی پارٹی کا مسلم چہرہ اوراوکھلا کے ممبراسمبلی امانت اللہ خان دوسری بار دہلی وقف بورڈ کے چیئرمین منتخب ہوگئے ہیں۔ اس طرح سے ایک بارپھر دہلی وقف بورڈ کو نئی باڈی ملی گئی ہے اور اب سرد پڑے بورڈ کو دوبارہ سے متحرک کرنے کا عمل شروع ہونے کا امکان ہے۔


دہلی وقف بورڈ کے چیئرمین کے لئے آج دارالحکومت دہلی کے سول لائن ابھمنیو آفس میں انتخاب ہونا تھا، لیکن کسی دوسرے ممبر کی طرف سے چیئرمین عہدے کے لئے نامزدگی نہیں کی گئی، جس کے بعد امانت اللہ خان بلامقابلہ دوبارہ چیئرمین منتخب ہوگئے۔ وقف بورڈ کے تمام 6 ممبران موجود تھے۔


امانت اللہ خان نے دوبارہ چیئرمین منتخب ہونے کے بعد اپنے عزم اور ارادے کو ایک بار پھر دہراتے ہوئے کہا کہ وقف بورڈ کو مضبوط بنائیں گے۔ وقف کی جائیداد پر جہاں قبضے ہیں، ان کو خالی کرائیں گے اور جو لوگ لاکھوں کی جگہ پر چند روپئے کرایہ دے رہے ہیں، ان کو قانون کے مطابق لائیں گے تاکہ وقف کی جائیداد کا تحفظ کیا جاسکے۔


واضح رہے کہ نومبر 2016 میں اس وقت کے لیفٹیننٹ گورنر رہے نجیب جنگ نے وقف بورڈ کو تحلیل کردیا تھا۔ اس وقت بورڈ تنازعہ کا شکارہوا تھا کیونکہ امانت اللہ خان نے چیئرمین رہتے ہوئے جو بھی فیصلے کئے تھے، اسے نجیب جنگ نے منسوخ کردیاتھا۔ اس کے بعد وقف بورڈ کے رکن رہے مفتی اعجازارشد قاسمی اور چودھری شریف نے استعفیٰ دے دیا تھا۔ جبکہ شیعہ زمرے کی بھی سیٹ کسی بنا پرخالی ہوگئی تھی۔

اس دوران امانت اللہ خان نے کرائے داروں پر نکیل کستے ہوئے ان کے لئے سخت قانون بنائے تھے، جس کا بورڈ کو فائدہ ہونا یقینی تھا۔ اس دوران مولانا عمیرالیاسی جیسی اہم شخصیات کے خلاف بھی مورچہ سنبھال لیا تھا۔ اس کے بعد کئی طرح کی بدعنوانیوں کے الزامات بھی عائد ہونے لگے تھے، لیکن کسی کی مکمل تصدیق نہیں ہوسکی تھی۔

گزشتہ دنوں جب وقف بورڈ کی تشکیل کا عمل دوبارہ شروع ہوا تھا تو اس بات کی قیاس آرائی کی جارہی تھی کہ چودھری شریف بھی وقف بورڈ چیئرمین کے لئے  امیدوار بن سکتے ہیں، لیکن انہوں نے وقت رہتے ہوئے اپنا فیصلہ  تبدیل کردیا اورامانت اللہ خان بلامقابلہ چیئرمین منتخب ہوگئے ہیں۔ اس کے بعد چیئرمین پر کئی ذمہ داریاں بڑھ جائیں گی کیونکہ وہ وقف بورڈ کو مضبوط بنانے کے لئے پہلے ہی کئی لائحہ عمل تیار کرچکے ہیں۔ تاہم دیکھنا یہ ہوگا کہ اب انہیں اس معاملے میں کتنی کامیابی ملتی ہے۔

 

 
First published: Sep 04, 2018 09:49 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading