ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

امت شاہ کی پارٹی کارکنوں کو نصیحت ، جے این یو کے مسئلے پر دیگر پارٹیوں کے نظریات سے لوگوں کو کرائیں واقف

لکھنو: بھارتیہ جنتاپارٹی کو واضح نظر والی سیاسی تنظیم قرار دیتے ہوئے پارٹی صدر امت شاہ نے کارکنوں سے اپیل کی کہ وہ وطن پرستی اور جواہر لال نہرو یونیورسٹی کے مسئلے پر دیگر پارٹیوں کے نظریات سے لوگوں کو واقف کرائیں۔

  • UNI
  • Last Updated: Feb 25, 2016 01:22 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
امت شاہ کی پارٹی کارکنوں کو نصیحت ، جے این یو کے مسئلے پر دیگر پارٹیوں کے نظریات سے لوگوں کو کرائیں واقف
لکھنو: بھارتیہ جنتاپارٹی کو واضح نظر والی سیاسی تنظیم قرار دیتے ہوئے پارٹی صدر امت شاہ نے کارکنوں سے اپیل کی کہ وہ وطن پرستی اور جواہر لال نہرو یونیورسٹی کے مسئلے پر دیگر پارٹیوں کے نظریات سے لوگوں کو واقف کرائیں۔

لکھنو: بھارتیہ جنتاپارٹی کو واضح نظر والی سیاسی تنظیم قرار دیتے ہوئے پارٹی صدر امت شاہ نے کارکنوں سے اپیل کی کہ وہ وطن پرستی اور جواہر لال نہرو یونیورسٹی کے مسئلے پر دیگر پارٹیوں کے نظریات سے لوگوں کو واقف کرائیں۔


مسٹر شاہ نے آج یہاں کہا کہ میں گذشتہ چند دنوں سے جے این یو میں لگائے گئے ملک مخالف نعروں کے بارے میں کانگریس اور اس کے نائب صدر راہل گاندھی سے لگاتار پوچھ رہے ہیں کہ کیا وہ ان نعروں کی حمایت کرتے ہیں، لیکن اس مسئلے پر انہوں نے خاموشی اختیار کررکھی ہے۔


انہوں نے کہا کہ مسٹر گاندھی نے ملک مخالف نعروں کو طلبا کی اظہار رائے کی آزادی قرار دیتے ہوئے اس کی حمایت کی تھی۔ یہاں اسمبلی روڈ پر پارٹی کی تو تعمیر شدہ عمارت کا افتتاح کرنے کے بعد بی جے پی کے صدر نے کہا کہ کانگریس حب الوطنی کے ہمارے سوال کا کوئی جواب اس لئے نہیں دے رہی کہ وہ ملک مخالف طاقتوں کا ساتھ دے رہے ہیں ۔


انہوں نے اس بات کا اعادہ کیا کہ بی جے پی حب الوطنی کے مسئلے پر کسی بھی قیمت پر کوئی سمجھوتہ نہیں کرے گی۔ جمہوریت میں اس طرح کے ملک مخالف عناصر کے لئے کوئی جگہ نہیں ہے۔ بی جے پی کے صدر نے پارٹی لیڈروں اور کارکنوں سے اپیل کی ہے کہ وہ ریاست کے ہرگھر میں جاکر لوگوں کو ملک مخالف عناصر کے سازش سے واقف کرائیں اور اس کے ساتھ ہی عام لوگوں کو یہ بھی بتائیں کے بی جے پی ان عناصر کا کس طرح مقابلہ کر رہی ہے۔


انہوں نے کہا کہ بی جے پی محض اقتدار حاصل کرنے کی سیاست کی دوڑ میں شامل پارٹی نہیں ہے بلکہ اس کے حب الوطنی کے ایجنڈے کے ساتھ ایک یقینی نظریہ ہے۔ مسٹر شاہ نے کہا کہ ہم کسی بھی قیمت پر حب الوطنی کے مسئلے پر سمجھوتہ نہیں کرسکتے اور ملک مخالف کام کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔


ریاستی اسمبلی کے آئندہ انتخابا ت کا ذکر کرتے ہوئے بی جے پی کے صدر نے کہا کہ پارٹی مکمل اکثریت کے ساتھ ریاست میں اقتدار میں آئے گی۔ بھارت ماتا کی جے اور امت شاہ زندہ باد نعروں کے درمیان پارٹی کے نو تعمیر شدہ دفتر کے کشا بھاؤ ٹھاکرے ہال میں منعقدہ اس پروگرام میں انہوں نے کہا کہ ’’اب ہمارا ترین پارٹی کا ایک جدید ترین دفتر ہے جہاں ریاست میں اکثریت والی حکومت بنانے کی حکمت عملی تیار کی جائے گی۔


مسٹر شاہ نے کہا کہ بی جے پی کے اس طرح کے جدید ترین دفتر ہر ضلع میں قائم کئے جائیں گے تاکہ پارٹی کو تنظیمی سطح پر مضبوط بنایا جاسکے۔انہوں نے بتایا کہ اترپردیش کے چالیس اصلاع میں پارٹی کے دفاتر بنانے کے لئے زمین خریدی جاچکی ہے ۔ ریاست کے بیس دیگر اضلاع میں آئندہ دو مہینے میں اس کے لئے زمین خرید لی جائے گی۔


بی جے پی کے صدر نے کہا کہ پارٹی کے جدید ترین دفتر بنانے کا فیصلہ بنگلور اجلاس میں کیاگیاتھا۔ آئندہ دو مہینے میں ملک کے دو سو اضلاع میں لائبریری ، کال سنٹر، معیاری خانہ اور دیگر سہولتوں سے لیس نئی دفاتر قائم کئے جائیں گے۔


مسٹر شاہ نے کہا کہ ’’ہم نے دسمبر 2016 تک ملک کے تمام اضلاع میں بی جے پی کے نئے دفاتر کی عمارت تعمیر کا کام شروع کرنے کا ہدف مقرر کیا ہے ۔ یہ دفاتر 2017 تک کام کرنا شروع کردیں گے بعد میں مسٹر شاہ نے پارٹی کے ممبران اسمبلی سے ملاقات کرکے آئندہ ریاستی اسمبلی انتخابات کی حکمت عملی کے بارے میں صلاح و مشورہ کرکے دہلی کے لئے روانہ ہوگئے۔


اس سے قبل بی جے پی کے صدر مسٹر شاہ اترپردیش کے دو روزہ دورے پر کل آئے تھے ۔ انہوں نے بہرائچ میں راجہ سہیل دیو کے مجسمے کی نقاب کشائی کرنے کے بعد ایک جلسہ کو خطاب کیاتھا ۔اس کے بعد انہوں نے بلرام پور میں پارٹی کے ڈسٹرکٹ دفتر ’’اٹل بھون‘‘ کا سنگ بنیاد رکھا۔ انہوں نے لکھنؤ میں رات کا قیام کیا ۔

First published: Feb 25, 2016 01:22 PM IST