ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

دگی سے شادی کے بعد فیس بک پر چھلک اٹھا امرتا کا درد اورغصہ، صفائی بھی دی

نئی دہلی۔ کانگریس کے سینئر لیڈر دگ وجے سنگھ سے اپنی شادی کی خبر شئیر کرتے ہوئے امرتا سنگھ نے فیس بک پر اپنا درد بیان کیا ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: Sep 06, 2015 12:15 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
دگی سے شادی کے بعد فیس بک پر چھلک اٹھا امرتا کا درد اورغصہ، صفائی بھی دی
نئی دہلی۔ کانگریس کے سینئر لیڈر دگ وجے سنگھ سے اپنی شادی کی خبر شئیر کرتے ہوئے امرتا سنگھ نے فیس بک پر اپنا درد بیان کیا ہے۔

نئی دہلی۔ کانگریس کے سینئر لیڈر دگ وجے سنگھ سے اپنی شادی کی خبر شئیر کرتے ہوئے امرتا سنگھ نے فیس بک پر اپنا درد بیان کیا ہے۔ انہوں نے لکھا ہے کہ میں نے اور دگ وجے سنگھ نے ہندو رسم و رواج کے مطابق شادی کر لی ہے۔ اس موقع پر میں ان سب کا شکریہ ادا کرنا چاہتی ہوں، جو حالیہ مشکل وقت میں میرے ساتھ کھڑے رہے ہیں۔ میرے لئے گزشتہ ڈیڑھ سال کاعرصہ کافی تناو اور دردناک والا عرصہ رہا ہے۔


محترمہ امرتا رائے نے کہا ’میں نے محبت کیلئے دگ وجے سنگھ سے شادی کی ہے۔ میں نے ان سے پہلے ہی درخواست کی تھی کہ وہ اپنی جائیداد اپنے بیٹے اور بیٹیوں کے نام کردیں۔ میں باعزت اور پیشہ وارانہ کریئر کی طرف بڑھتے ہوئے ان کے ساتھ نئی زندگی شروع کرنا چاہتی ہوں‘۔

محترمہ رائے نے اپنے ٹویٹ میں کہا ’ میں نے اپنے سابق شوہر سے علیحدگی اختیار کرلی ہے اور ہم نے باہمی مفاہمت سے طلاق کے دستاویزات بھی داخل کردیئے ہیں۔بعدازاں میں نے دگ وجے سنگھ سے شادی کرنے کا فیصلہ کیا‘۔

مسٹر سنگھ نے اس وقت اپنی الیکشن مہم کے دوران کہا تھا ’امرتا اور ان کے شوہر نے باہمی مفاہمت سے طلاق کی عرضی داخل کی ہے۔ جیسے ہی اس پر فیصلہ ہوگا، ہم اسے (اپنے رشتے کو) باضابطہ شکل دیں گے‘۔

ٹی وی اینکر نے کہا ’اس موقع پر میں ان تمام لوگوں کا شکریہ ادا کرنا چاہتی ہوں جو مشکل وقت میں میرے ساتھ کھڑے رہے۔ گزشتہ ڈیڑھ سال بہت تکلیف دہ رہا۔ میں سائبر کرائم کی شکار بنی لیکن میرے ساتھ مجرموں جیسا سلوک کیا گیا۔ کوئی غلطی نہ ہوتے ہوئے بھی میرے لئے توہین آمیز زبان کا استعمال کیا گیا۔ جن لوگوں کو محبت اور عزت میں کوئی یقین نہیں ہے انہوں نے مجھے سوشل میڈیا پر بے عزت کرنے کی کوشش کی۔ لیکن اس دوران میں نے باوقار طریقے سے خاموشی اختیار کی اور خود پر اور دگ وجے پر اعتماد کرتے ہوئے، میں کام میں مصروف ہوگئی۔
محترمہ امرتا نے ان لوگوں پر تنقید کی جنہوں نے ہائی پروفائل لیڈر کے ساتھ شادی کرنے کے پیچھے ان کے ارادوں پر شک کیا۔ انہوں نے کہا ’مجھے پتہ ہے کہ ہماری عمر میں فرق ہونے پر سوال اٹھیں گے لیکن میں جانتی ہوں کہ میرے لئے کیا صحیح ہے اور میں اپنی سمجھداری سے فیصلے کرسکتی ہوں۔ ہم جدید ترقی پذیر ہندستان میں رہ رہے ہیں اور آئینی اور قانونی نظام میری زندگی کے بارے میں فیصلہ کرنے کا مجھے حق دیتا ہے۔
محترمہ امرتا نے کہا ’مجھے پتہ ہے کہ میرے فیصلے پر سوال اٹھائے جا سکتے ہیں۔ ایسے معاملوں میں وقت ہی فیصلہ کرتا ہے۔ میں ایک پیشہ ور خاتون ہوں، جس نے پورے کریئر میں محنت سے کام کیا اور اپنے لئے جگہ بنائی۔ میں اپنی پیشہ وارانہ صلاحیت پر اعتماد کرتی ہوں اور کسی دیگر جدید خاتون کی طرح میں اپنے کندھے پر اپنی اور کنبہ کی ذمہ داریاں اٹھاتی ہوں اور اٹھاتی رہوں گی‘۔ تاہم امرتا نے یہ نہیں بتایا کہ ان کی شادی کہاں ہوئی۔
First published: Sep 06, 2015 12:13 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading