ہوم » نیوز » No Category

علی گڑھ مسلم یونیورسٹی طلبہ یونین کی رسمِ تنصیب کا انعقاد

علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کی 83ویں نو منتخب طلبہ یونین کی رسمِ تنصیب آج یونیورسٹی کے ایتھلیٹک گراؤنڈ پر طلبہ کی زبردست بھیڑکی موجودگی میں منعقد ہوئی۔

  • Pradesh18
  • Last Updated: Oct 14, 2016 09:25 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
علی گڑھ مسلم یونیورسٹی طلبہ یونین کی رسمِ تنصیب کا انعقاد
علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کی 83ویں نو منتخب طلبہ یونین کی رسمِ تنصیب آج یونیورسٹی کے ایتھلیٹک گراؤنڈ پر طلبہ کی زبردست بھیڑکی موجودگی میں منعقد ہوئی۔

علی گڑھ : علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کی 83ویں نو منتخب طلبہ یونین کی رسمِ تنصیب آج یونیورسٹی کے ایتھلیٹک گراؤنڈ پر طلبہ کی زبردست بھیڑکی موجودگی میں منعقد ہوئی۔ نو منتخب طلبہ یونین کے عہدیداران اور کیبنیٹ اراکین کا وائس چانسلر اور طلبہ یونین کے سرپرست لیفٹیننٹ جنرل ضمیر الدین شاہ(ریٹائرڈ) نے گاؤن پہناکر اور گلپوشی کرکے خیر مقدم کیا۔

رسمِ تنصیب سے خطاب کرتے ہوئے وائس چانسلر لیفٹیننٹ جنرل ضمیر الدین شاہ (ریٹائرڈ) نے طلبہ یونین کے انتخابات پُر امن ماحول میں منعقد ہونے پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اس انتخاب نے ساری دنیا کو دکھادیا ہے کہ یہاں کے طلبہ امن پسند ہیں اور یہ ادارہ خود میں سب سے منفرد ہے۔انہوں نے کہا کہ طلبہ یونین کے انتخابات کا جو وعدہ انہوں نے طلبہ سے کیا تھا اس کو انہوں نے پورا کیا ہے۔ وائس چانسلر نے طلبہ کو یقین دلایا کہ ان کے جائز مطالبات کو پورا کیا جائے گا ساتھ ہی انہوں نے تنبیہہ کی کہ کسی بھی ناجائز مطالبہ کو پورا نہیں کیا جائے گا۔انہوں نے کہا کہ وہ طلبہ و طالبات کے مسائل سے واقف ہیں اور ان کے اقامتی مسئلہ کو حل کرنے کے تعلق سے سنجیدہ ہیں۔انہوں نے کہا کہ پانچ ہزار طلبہ اور دو ہزار طالبات کے لئے اقامتی ہال کی تعمیر کا کام جاری ہے اور اس کے بعد بڑی حد تک اقامتی مسئلہ حل ہوجائے گا۔

جنرل شاہ نے کہا کہ غیر ملکی طلبہ کے لئے بھی سابق طلبہ کی مدد سے انٹرنیشنل ہاسٹل کی تعمیر بھی جلد ہی شروع ہوگی۔انہوں نے کہا کہ ان کی کوشش ہے کہ یہ یونیورسٹی 2017تک ملک کی نمبر ایک یونیورسٹی بنے۔انہوں نے طلبہ سے کہا کہ وہ ڈسپلن میں رہ کرطلبہ یونین کے وقار کو بنائے رکھیں۔انہوں نے کہا کہ ان کے ساڑھے چار سال کی وائس چانسلر شپ کے دوران ہوئے ترقیاتی کاموں سے ان کے کام کا جائزہ لیا جاناچاہئے۔

پروگرام کے مہمانِ خصوصی1966میںطلبہ یونین کے صدر رہ چکے ڈاکٹر محسن رضا نے کہا کہ اے ایم یو میںطلبہ یونین کی تشکیل کا مقصد طلبہ میں تعلیمی معیار کو فروغ دینے کے ساتھ ساتھ ان میں ادبی و ثقافتی سرگرمیوں میں دلچسپی پیدا کرنے کے علاوہ قیادت کا جذبہ، شخصیت سازی، بحث و مباحثہ اور تحریری صلاحیت کو فروغ دینا تھا۔ انہوں نے کہا کہ اے ایم یو کی طلبہ یونین کو یہ شرف حاصل ہے کہ بابائے قوم مہاتما گاندھی اس کے ا ولین تا حیات رکن بنے اور اسطلبہ یونین نے45سے زائد مجاہدینِ آزادی پیدا کئے۔

ڈاکٹر رضا نے کہا کہ1953میںطلبہ یونین کے اس وقت کے صدر امین بلبلیا نے درجہ چہارم طبقہ کے لئے یونین اسکول قائم کیا اور یہ اسکول دنیا کا واحد اسکول تھا جو درجہ چہارم طبقہ کے بچوں کے لئے قائم کیاگیا تھا۔انہوں نےطلبہ یونین کی باوقار تاریخ پر روشنی ڈالتے ہوئے یونیورسٹی کے اقلیتی کردار کی بحالی کے لئے چلائی گئی تحریک کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ یونین ایک ادارہ ہے اور اس کو کبھی بند نہیں کیا جانا چاہئے۔انہوں نے طلبہ سے اپیل کی کہ انہیں بھی یونیورسٹی انتظامیہ کے ساتھ تعاون کا رویّہ اختیار کرنا چاہئے۔ ڈاکٹر محسن نے طلبہ سے کیمپس کے قرب و جوار کے علاقوں میں علم کا چراغ روشن کرنے کی بھی اپیل کی۔

طلبہ یونین کے صدر فیض الحسن نے کہا کہ وہ طلبہ کے مسائل کے حل کے لئے پوری کوشش کریں گے اور کسی بھی مذہب کے ماننے والوں کے خلاف ہونے والی زیادتی کی ڈٹ کر مخالفت کریں گے۔انہوں نے اقلیتی کردار کی بحالی، طلبہ کو بہتر میڈیکل سہولیات، تجربہ گاہوں میں جدید آلات کی فراہمی، نئے کورسیز کے آغاز سمیت متعدد مسائل پر کھل کر اپنے خیالات کا اظہار کیا۔ انہوں نے طلبہ سے اے ایم یو کی روایات کو بحال کرنے کی بھی اپیل کی۔
طلبہ یونین کے نائب صدر محمد ندیم انصاری نے کہا کہ وہ طلبہ کی بہبود کے لئے کام کریں گے اور سبھی کو ساتھ لے کر اس ادارہ کا نام روشن کریں گے۔انہوں نے کہا کہ ہم سب کی ایک شناخت علیگیرین کے طور پر ہونی چاہئے۔انہوں نے طلبہ کے اقامتی، لائبریری اور دیگر امور سے وابستہ مسائل پر بھی روشنی ڈالی۔ طلبہیونین کے سکریٹری نبیل عثمانی نے کہا کہ وہ مضبوطی کے ساتھ یونین کو چلائیں گے۔انہوں نے ٹی پی او کو مزید زود اثر بنائے جانے کی ضرورت پر زور دیا تاکہ طلبہکو روزگار کے بہتر مواقع حاصل ہوسکیں۔
اس سے قبل صدر کے عہدے کے شکست یافتہ امیدواران میں محمد ابوالفراح شازلی اور محمد رضوان، نائب صدر کے امیدواران محمد عرفات حسن رضوی، جانب حسن، فرحان علی، کہکشاں اور سکریٹری کے عہدے کے شکست یافتہ امیدواران محمد عمران شازی نے بھی رسمِ تنصیب کی تقریب سے خطاب کیا۔
First published: Oct 14, 2016 09:25 PM IST