ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

سی اے اے احتجاج: یوپی میں ایس پی کے رکن پارلیمنٹ شفیق الرحمن برق سمیت 17 کے خلاف ایف آئی آر درج

جانکاری کے مطابق دو مقدمے درج کئے گئے ہیں۔ اس میں ایک معاملہ چودھری سرائے پولیس چوکی پر پتھراؤ اور توڑ۔پھوڑ کا ہے اس میں ایس پی رکن پارلمینٹ سمیت 17 لوگ نامزد ہیں جبکہ سیکڑوں نامعلوم ہیں۔

  • Share this:
سی اے اے احتجاج: یوپی میں ایس پی کے رکن پارلیمنٹ شفیق الرحمن برق سمیت 17 کے خلاف ایف آئی آر درج
Photo Credit: Facebook, Adv Turk Tauseef Ahmadاطلاع کےمطابق اب تک اس سلسلے میں 30 لوگوں کی گرفتاری ہوئی ہے۔ پولیس کے مطابق ملزموں کی گرفتاری کیلئے ٹیمیں مسلسل دبش دے رہی ہیں۔

سنبھل: یوپی کے سنبھل میں شہریت ترمیمی قانون کی مخالفت میں ہوئے پر تشدد احتجاج کے بعد پولیس نے کارروائی شروع کردی ہے۔ جانکاری کے مطابق جعمرات کو یہاں ہوئے تشدد کو لیکر سماجوادی پارٹی کے رکن پارلیمنٹ شفیق الرحمٰن برق اور لیڈر فیروز خان سمیت 17 لوگوں کے خلاف ایف آئی آر درج کی گئی ہے۔

جانکاری کے مطابق دو مقدمے درج کئے گئے ہیں۔ اس میں ایک معاملہ چودھری سرائے پولیس چوکی پر پتھراؤ اور توڑ۔پھوڑ کا ہے اس میں ایس پی رکن پارلمینٹ سمیت 17 لوگ نامزد ہیں جبکہ سیکڑوں نامعلوم ہیں۔

Photo Credit: Facebook, Adv Turk Tauseef Ahmad

وہیں دوسرے معاملے میں روڈویز بسوں میں توڑ۔پھوڑ اور آگ زنی کی ایف آئی آر درج کی گئی ہے۔ اس میں سیکڑوں نامعلوم بتائے گئے ہیں۔ اطلاع کےمطابق اب تک اس سلسلے میں 30 لوگوں کی گرفتاری ہوئی ہے۔ پولیس کے مطابق ملزموں کی گرفتاری کیلئے ٹیمیں مسلسل دبش دے رہی ہیں۔

پولیس کے مطابق سنبھل میں ضلع جوائنٹ ایکشن کمیٹی کے چیئرمین ڈاکٹر ناظم کی کال پر تھانہ کوتوالی علاقے میں چودھری سرائے میں 1500 سے 2000 حامیوں کے ذریعے میمورنڈم دینے کے بعد واپس لوٹتے وقت ایک بس میں آگ زنی کی گئی تھی۔ ساتھ ہی دو بسوں پر پتھراؤ کیا گیا۔ جس سے بس کے شیشے ٹوٹنے سے چار لوگ معمولی طور پر زخمی ہوئے تھے۔


sambhal bawal
وہیں شہریت ترمیمی قانون کو لیکر ہو رہے احتجاجی مظاہرے کے مد ںظر انتظامیہ نے یوپی کے 12 اضلاع میں انٹرنیٹ خدمات کو بند کردیا ہے۔ اطلاع کے مطابق یوپی کے غازی آباد مین جعمرات کی رات 10 بجے سے 24 گھنٹے کیلئے انٹرنیٹ خدمات کو روک دیا گیا ہے۔ ساتھ ہی پریاگ راج میں بھی 19 دسمبرکی دیر شام سے لیکر 20 دسمبر کی صبح 10 بجے تک کیلئے انٹرنیٹ خدمات معطل کردی گئی ہیں۔ اس کے ساتھ ہی لکھنؤ ، مؤ، وارانسی، سنبھل سمیت 12 ضلاع میں انٹرنیٹ بند کردیا گیا ہے۔ اس کے ساتھ ہی انتطامیہ نے پوری ریاست میں 31 جنوری تک دفعہ 144 نافذ کردی ہے۔
First published: Dec 20, 2019 12:47 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading