ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

قرآن کریم میں امن اور بھائی چارہ کا پیغام ، مگر اکثر لوگ اس کو صحیح طریقہ سے نہیں سمجھتے : فوجی سربراہ

ہندوستانی فوج کے سربراہ بپن راوت نے کہا ہے کہ قرآن کریم میں امن اور آپسی بھائی چارہ کو خوبصورت اندار میں پیش کیا گیا ہے ، مگر اکثر لوگ اس بات کو سمجھ نہیں پاتے ہیں ۔

  • Agencies
  • Last Updated: Dec 14, 2017 11:39 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
قرآن کریم میں امن اور بھائی چارہ کا پیغام ، مگر اکثر لوگ اس کو صحیح طریقہ سے نہیں سمجھتے : فوجی سربراہ
ہندوستانی فوج کے سربراہ بپن راوت نے کہا ہے کہ قرآن کریم میں امن اور آپسی بھائی چارہ کو خوبصورت اندار میں پیش کیا گیا ہے ، مگر اکثر لوگ اس بات کو سمجھ نہیں پاتے ہیں ۔

نئی دہلی : ہندوستانی فوج کے سربراہ بپن راوت نے کہا ہے کہ قرآن کریم میں امن اور آپسی بھائی چارہ کو خوبصورت اندار میں پیش کیا گیا ہے ، مگر اکثر لوگ اس بات کو سمجھ نہیں پاتے ہیں ۔ فوجی سربراہ نے یہ باتیں جموں و کشمیر کے مدارس کے طلبہ ایک گروپ سے ملاقات کے دوران کہی ۔

اپنے دفتر میں طلبہ سے بات چیت کرتے ہوئے جنرل راوت نے طلبہ سے کہا کہ کرکٹ اور فٹ بال جیسے کھیل کھیلیں اور دہشت گردی پر لگام لگانے کی سمت میں کام کریں تاکہ وادی ایک مرتبہ پھر پھل پھول سکے ۔ راوت نے 25 طلبہ کے ایک گروپ سے پوچھا کہ آپ لوگوں میں سے کتنے لوگوں نے مقدس قرآن پڑھی ہے ، انہوں نے کہا کہ میں آپ کو بتاتا ہوں کہ اس میں کیا پیغام ہے ، اس میں امن کا پیغام ہے۔

انہوں نے طلبہ سے مزید کہا کہ قرآن کریم میں امن کے پیغام کو خوبصورت انداز میں پیش کیا گیا ہے ، یہ جو آئی ایس کا شور ہے ، یہ قرآن میں کہیں نہیں ہے ۔ فوجی سربراہ نے کہا کہ اس لئے آپ کو قرآن کے پیغام پر عمل کرنا چاہئے ، آپ سمجھتے ہیں کہ لوگ پیغام کو سمجھتے ہیں ، ہم اسے صحیح طریقہ سے نہیں سمجھتے ہیں ، قرآن انسانی اقدار کا سبق دیتا ہے ۔ یہ طلبہ فوج کی جانب سے چلائے جانے والے قومی اتحاد یاترا کے تحت آئے ہوئے تھے۔

First published: Dec 14, 2017 11:36 PM IST