உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ایکسکلوزیو انٹرویو : راجستھان کے نتائج کو ارون جیٹلی نے بتایا باعث تشویش ، وسندھرا راجے کو کیا فون

    وسندھرا راجے ۔ فائل فوٹو ۔ پی ٹی آئی

    وسندھرا راجے ۔ فائل فوٹو ۔ پی ٹی آئی

    وزیر خزانہ ارون جیٹلی نے راجستھان میں ہوئے حالیہ ضمنی انتخابات کے نتائج کو باعث تشویش قرار دیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ پارٹی اس الیکشن میں شکست کی وجوہات کی جانچ کررہی ہے ۔

    • Share this:
      نئی دہلی : وزیر خزانہ ارون جیٹلی نے راجستھان میں ہوئے حالیہ ضمنی انتخابات کے نتائج کو باعث تشویش قرار دیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ پارٹی اس الیکشن میں شکست کی وجوہات کی جانچ کررہی ہے ۔ نیوز 18 انڈیا کے ساتھ ایکسکلوزیو انٹرویو میں جیٹلی نے کہا کہ میں نے وزیر اعلی سے بات کی ہے ، اگر ضرورت پڑی تو پارٹی اصلاحاتی اقدامات پر کام کررہی ہے۔
      غور طلب ہے کہ بی جے پی کو اجمیر اور الور سیٹوں پر لوک سبھا کے ضمنی الیکشن میں کانگریس سے کافی بڑے فرق کے ساتھ شکست کا سامنا کرنا پڑا ہے ۔ دونوں سیٹیں اس سے پہلے بی جےپی کے پاس تھیں اور ممبران پارلیمنٹ کی موت کے بعد یہاں ضمنی انتخابات ہوئے تھے ۔ الور میں بی جے پی کوتقریبا دو لاکھ ووٹوں سے شکت ملی جبکہ اجمیر میں 90000 ووٹوں سے ہار کا سامنا کرنا پڑا ہے۔
      بی جے پی کو واحد اسمبلی سیٹ ( منڈل گڑھ) پر ہوئے ضمنی انتخابات میں بھی شکست کا منہ دیکھنا پڑا تھا ۔ الور میں گزشتہ دو سالوں میں گئو رکشا اور کمیونل پولرائزیشن کے کئی واقعات سامنے آئے ہیں۔ راجستھان اسمبلی انتخابات میں محض 10 ماہ ہی باقی رہ گئے ہیں ، ایسے میں یہ نتیجہ وسندھرا راجے حکومت کیلئے ایک بڑا جھٹکا مانا جارہا ہے۔
      اس سے پہلے گزشتہ اسمبلی انتخابات میں راجستھان میں بی جے پی کو تین چوتھائی اکثریت ملی تھی ۔ بعد میں لوک سبھا انتخابات میں پوری 25 سیٹیں جیت کر بی جے پی نے کانگریس کو بری طرح سے ہرایا تھا ۔ راجستھان میں گزشتہ سال ہوا کسان آندولن بھی بی جے پی کیلئے تشویش کا موضوع ہے۔
      First published: