ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

ارون جیٹلی نے کہا : آندھرا پردیش سے نبھائیں گے سبھی وعدے ، این ڈی اے مل کر لڑے گی 2019 کا الیکشن

لوک سبھا انتخابات 2019 کے پیش نظر بی جے پی کی زیر قیادت این ڈی اے اور تیلگو دیشم پارٹی میں اتحاد کے مستقبل کو لے کر آندھرا پردیش کے وزیر اعلی چندرا بابو نائیڈو کی رہائش گاہ پر ٹی ڈی پی لیڈروں کی میٹنگ جاری ہے ۔

  • Share this:
ارون جیٹلی نے کہا : آندھرا پردیش سے نبھائیں گے سبھی وعدے ، این ڈی اے مل کر لڑے گی 2019 کا الیکشن
وزیر خزانہ ارون جیٹلی ۔ فائل فوٹو

نئی دہلی : لوک سبھا انتخابات 2019 کے پیش نظر بی جے پی کی زیر قیادت این ڈی اے اور تیلگو دیشم پارٹی میں اتحاد کے مستقبل کو لے کر آندھرا پردیش کے وزیر اعلی چندرا بابو نائیڈو کی رہائش گاہ پر ٹی ڈی پی لیڈروں کی میٹنگ جاری ہے ۔ اس درمیان وزیر خزانہ ارون جیٹلی نے بی جے پی - ٹی دی پی اتحاد کو لے کر بڑا بیان دیا ہے ۔ ارون جیٹلی کا کہنا ہے کہ اگلے لوک سبھا الیکشن میں بی جے پی اور ڈی ٹی پی کا اتحاد جاری رہے گا ۔ این ڈی اے مل کر 2019 کا الیکشن لڑے گی۔

نیوز 18 سے ایکسکلوزیو بات چیت میں وزیر خزانہ نے یہ باتیں کہیں۔ انہو ں نے کہا کہ ہم آندھرا پردیش کے پیکج کو الگ سے نافذ کررہے ہیں، بجٹ کے ساتھ اس کا کوئی لینا دینا نہیں ہے ، آندھرا پردیش کے لوگوں کیلئے جو وعدے کئے گئے تھے ، وہ سبھی پورے کئے جائیں گے ۔ جیٹلی نے کہا کہ ٹی ڈی پی اور بی جے پی کے درمیان جو بھی اختلافات ہیں ، انہیں جلد ہی حل کرلیا جائے گا۔

خیا ل رہے کہ آندھرا پردیش کے وزیر اعلی اور تیلگو دیشم پارٹی کے سربراہ چندر بابو نائیڈو نے بجٹ میں ریاست کی اندیکھی کو لے کر این ڈی اے حکومت کے تئیں ناراضگی کا اظہار کیا تھا ۔ نائیڈو نے کہا تھا کہ حکومت نے پانچ سال پہلے آندھرا پردیش کی تقسیم کے وقت کئی وعدے کئے تھے ، لیکن ایک بھی وعدہ پورا نہیں کیا گیا۔

آندھر ا پردیش میں سال 2019 میں ہی اسمبلی اور لوک سبھا انتخابات ہونے والے ہیں ۔ حالانکہ اس سے عین قبل بی جے پی اور اس کی جنوبی ہند کی اس اتحادی پارٹی کے درمیان تلخیاں بڑھ گئی ہیں ۔ اس کی ایک وجہ نیوز 18 کے ساتھ وائی ایس آر کانگریس کے سربراہ جگن موہن ریڈی کے انٹرویو کو بھی مانی جارہی ہے، جس میں ریڈی نے مرکز کی طرف سے آندھرا پردیش کو خصوصی ریاست کا درجہ دئے جانے کی صورت میں آئندہ بی جے پی کے ساتھ جانے کا اشارہ کیا تھا۔

اس درمیان چندرا بابو نائیڈو نے امراوتی میں پارٹی ممبران پارلیمنٹ کی میٹنگ بلائی ، جس میں اگلے قدم پر فیصلہ کا امکان ہے ۔ وہیں نائیڈو کے این ڈی اے کی ایک اور اتحادی پارٹی شیو سینا کے ساتھ بھی رابطہ میں ہونے کی باتیں سامنے آرہی ہیں۔ ذرائع کے مطابق ٹی ڈی پی سربراہ نائیڈو نے شیو سینا سربراہ ادھو ٹھاکرے سے ہفتہ کو فون پر بات بھی کی ہے ۔

ارون جیٹلی نے حالانکہ نیوز 18 سے بات چیت میں اشارہ کیا کہ بی جے پی کی سب سے قدیم ساتھی شیو سینا کے ساتھ اختلافات الگ نوعیت کے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ میں یہ بات جانتا ہوں کہ ہم مہاراشٹر میں شیو سینا کو سینئر ساتھی کا درجہ دینے کو تیار تھے اور گزشتہ اسمبلی انتخابات میں انہیں زیادہ سیٹیں بھی دیں ۔ جیٹلی نے کہا کہ شیو سینا لیکن بضد رہی اور پھر طے ہوا کہ دونوں پارٹیاں اپنے اپنے دم پر اسمبلی انتخابات الگ الگ لڑیں گی۔
اسمبلی انتخابات میں بی جے پی سب سے بڑی پارٹی بن کر ابھری ، لیکن دونوں نے مہاراشٹر میں ایک مرتبہ پھر مل کر حکومت بنائی ۔ تاہم ان کے درمیان رشتے ہمیشہ کشیدہ رہے ۔شیو سینا اہم سیاسی معاملات پر کبھی بھی بی جے پی پر حملہ کا موقع نہیں چوکتی ہے۔
وہیں ارون جیٹلی سے جب پوچھا گیا کہ کیا وہ لوک سبھا انتخابات میں دونوں پارٹیوں کو ایک ساتھ میدان میں دیکھنا چاہتے ہیں ، تو انہیں نے کہا کہ میں چاہتا ہوں کہ این ڈی اے متحد رہے اور ہمارے سبھی ساتھی ہمارے ساتھ رہیں۔
قابل ذکر ہے کہ شیو سینا نے گزشتہ ماہ ممبئی میں ہوئی اپنی نیشنل ایگزیکٹو کی میٹنگ میں ایک تجویز پاس کرکے اعلان کیا تھا کہ وہ 2019 میں ہونے والے اسمبلی اور لوک سبھا انتخابات بی جے پی کے ساتھ مل کر نہیں لڑے گی۔
First published: Feb 04, 2018 12:31 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading